”شمالی کوریا یہ ایک کام کرنے کے بالکل قریب پہنچ گیا ہے۔۔۔“ سیٹلائٹ تصاویر نے امریکہ میں کھلبلی مچا دی، بڑا خطرہ پیدا ہو گیا

واشنگٹن (قدرت روزنامہ30مارچ2017) امریکی تجزیہ کار کا کہنا ہے کہ سیٹلائٹ سے حاصل ہونے والی حالیہ تصاویر سے یہ اشارہ ملتا ہے کہ شمالی کوریا ایک اور ایٹمی دھماکے کی تیاریاں مکمل کرنے کے قریب پہنچ چکا ہے. یہ تصاویر ہفتے کے روز لی گئیں جس میں 4 گاڑیاں یا ساما ن سے لدے ٹرالر پونگیے ری(Punggye-ri) نیوکلیئر ٹیسٹ کی جگہ پر موجود ہیں اور ان کے ساتھ مواصلاتی تاریں بھی ہیں جو ممکنہ طور پر زمین پر بچھائی گئی ہیں.

جان ہوپکنز یونیورسٹی میں، کوریا، امریکہ منصوبے ’38 نارتھ‘ پراجیکٹ کا کہنا ہے کہ ”یہ سامان ٹیسٹ ایٹمی تجربہ شروع کرنے کیلئے استعمال کئے جانے، دھماکے سے ڈیٹا اکٹھا کرنے اور حاصل ہونے والے ڈیٹا کو پراسیس کرنے کیلئے استعمال کئے جانے کا امکان ہے.“ گزشتہ ہفتے ہرمیت ریاست(hermit state) میں واقع نیوکلیئر سائٹ پر ہونے والی سرگرمیوں کا جائزہ لینے کے بعد امریکی افواج بھی اسی طرح کے نتیجے پر پہنچی تھیں. شمالی کوریا اس وقت لمبے فاصلے تک مار کرنے والے میزائل کی تیاریوں کی جستجو میں ہے جو امریکی سرزمین پر ایٹمی وار ہیڈ لے جا سکے اور اب تک 5 ایٹمی تجربات بھی کر چکا ہے جن میں سے 2 گزشتہ سال کئے تھے. ماہرین کے مطابق شمالی کوریا کی جانب سے ایک اور ایٹمی دھماکہ نئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کیلئے تازہ ترین چیلنج ہو سکتا ہے جنہوں نے سوشل میڈیا پر اپنے پیغام میں کہا تھا کہ ” شمالی کوریا کا بین البراعظمی میزائل کی ملکیت کا مقصد پورا نہیں ہو گا.“ شمالی کوریا نے سال 2016ءمیں ایک سے زیادہ میزائل چلائے اور رواں مہینے کے آغاز میں بھی 4 میزائلوں کا تجربہ کیا جن کے بارے میں اس کا کہنا ہے کہ یہ جاپان میں موجود امریکی اڈوں پر حملوں کی اہلیت رکھتے ہیں. اس کے کچھ ہی عرصے بعد امریکہ کے نئے سٹیٹ سیکرٹری ریکس ٹیلرسن نے خطے کا دورہ کیا اور کہا کہ شمال کو ایٹمی اسلحہ سے پاک کرنے کی 20 سالہ کوششیں ناکام ہو گئی ہیں. انہوں نے تفصیلات بتائے بغیر نئے نقطہ نظر کا وعدہ بھی کیا. 38 نارتھ کے ریسرچرز نے نوٹ کیا کہ مذکورہ ایٹمی تجربہ کی جگہ سے پانی نکالا جا رہا ہے تاکہ مواصلاتی اورجانچ پڑتال کے سامان کیلئے سرنگ کو خشک رکھا جا سکے . ریسرچرز کا کہنا ہے کہ ”آلات کی تنصیب کیساتھ ان تمام عوامل کا امتزاج سختی سے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہیں کہ ایٹمی تجربے کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں.“ لیکن انہوں نے یہ انتباہ بھی کیا ہے کہ ان کے پاس اس بات کے ”کوئی حتمی ثبوت“ بھی نہیں ہیں. ان کا کہنا ہے کہ ” چونکہ شمالی کوریا کو پتہ ہے کہ دنیا انہیں دیکھ رہی ہے اور فریب دینے کے قابل ہے. اس لئے ایٹمی تجربے کا اعلان کرنے سے پہلے احتیاطی تدابیر استعمال کی جانی چاہئیں.“..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top