افغان صوبے بلخ میں جنگجوﺅں کا نماز جمعہ کے دوران آرمی ہیڈ کوارٹر پر حملہ، 8 افراد ہلاک، جوابی کارروائی میں تمام شدت پسند مارے گئے

کابل (قدرت روزنامہ21-اپریل-2017) افغان صوبے بلخ میں نماز جمعہ کے دوران ہونے والے آرمی ہیڈ کوارٹر پر حملے کے نتیجے میں 8 افراد ہلاک ہوگئے، گزشتہ دو ماہ کے دوران حکومت مخالف جنگجو گروپوں کی جانب سے آرمی کی تنصیبات پر یہ دوسرا براہ راست حملہ ہے. افغان میڈیا کے مطابق بلخ میں واقع افغان نیشنل آرمی کی 209 شاہین کور کمانڈر ہیڈ کوارٹر پر متعدد جنگجوﺅں کی جانب سے نماز جمعہ کے دوران حملہ کیا گیا .

سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ جنگجوﺅں نے آرمی ہیڈ کوارٹر پر حملہ دوپہر ڈیڑھ بجے کیا جس کے بعد افغان آرمی کی جانب سے جوابی کارروائی کی گئی . جنگجوﺅں اور افغان فوج میں یہ مقابلہ پانچ گھنٹے سے زائد وقت تک جاری رہا جس کے نتیجے میں تمام حملہ آور مارے گئے جبکہ افغان آرمی کے بھی 8 افراد ہلاک ہوئے. اس حملے کی تاحال کسی گروپ کی جانب سے ذمہ داری قبول نہیں کی گئی. واضح رہے کہ دو ماہ قبل حکومت مخالف جنگجوﺅں کی جانب سے کابل میں سردار محمد داﺅد ملٹری ہسپتال پر حملہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں 50 افراد ہلاک ہوگئے تھے...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top