عراق میں ٹرک کے ذریعے خود کش حملہ،24افراد ہلاک

بغداد(قدرت روزنامہ17فروری2017)عراقی دارالحکومت بغداد کے ایک شیعہ اکثریتی مضافاتی علاقے میں ایک بم دھماکے میں 26 افراد ہلاک ہوگئے .غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق عراقی وزارت داخلہ کے ترجمان نے فرانسیسی خبررساں ادارے سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ صدر سٹی نامی علاقے کی مصروف مرکزی شاہراہ میں ایک پک اپ ٹرک کے ذریعے خودکش حملہ آور نے خود کو اڑا لیا جس میں 42 افراد زخمی بھی ہوئے .

انہوں نے بات کرتے ہوئے بتایا کہ حملہ صدر سٹی کے علاقے حبیبیہ کے علاقے میں ہوا.عراقی حکومت کے اعدادوشمار کے مطابق 2017 کے ابتدائی چند روز میں بغداد میں خودکش حملوں میں اضافہ دیکھا گیا تھا تاہم حالیہ چند دنوں میں ان واقعات میں کمی ہوئی ہے.اس حملہ کی اب تک کسی گروہ یا تنظیم نے نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے تاہم ماضی میں شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ نے اس سے ملتی جلتے حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے. دولت اسلامیہ کے حملوں میں اس وقت سے تیزی دیکھی گئی ہے جب چار ماہ قبل امریکی فوج کی مدد کے ساتھ عراقی فوج نے تنظیم کے اہم گڑھ موصل سے اسے نکالنے کیلئے آپریشن شروع کیا. اس سے قبل منگل کے روز جنوبی بغداد میں ایک اور حملے میں 4 افراد ہلاک ہوئے تھے. صدر سٹے کے علاقے میں ہی دو جنوری کو ہونے والے حملے میں 35 افراد ہلاک ہوگئے تھے. گزشتہ چند روز میں بغداد میں شیعہ عالم مقتدہ الصدر کے حامیون نے مظاہرے کئے ہیں.مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ انتخابات کے نگران الیکشن کمیشن میں تبدیلیاں کی جائیں.اتوار کو مظاہروں میں پر تشدد واقعات میں 6 افراد ہلاک ہوگئے تھے.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top