اسرائیلی عدالت نے 23سالہ فلسطینی دوشیزہ کو ایک یہودی آباد کار کو چاقو گھونپنے کے الزام مین 16 سال جیل بھیجنے کا حکم دیا

مقبوضہ بیت المقدس(قدرت روزنامہ16فروری2017)اسرائیلی عدالت نے 23سالہ فلسطینی دوشیزہ کو ایک یہودی آباد کار کو چاقو گھونپنے کے الزام مین 16 سال جیل بھیجنے کا حکم دیا ہے.اطلاعات کے مطابق گزشتہ روز 1948ء کے مقبوضہ علاقے اللد میں قائم اسرائیل کی ایک مقامی عدالت نے 23 سالہ اسیرہ شاتیلا ابو عیادہ کو ایک یہودی آباد کار پر چاقو کے حملے کے الزام میں 16سال قید کی سزا کا حکم دیا.

خیال رہے کہ ابو عیادہ کو اسرائیلی فوج نے گذشتہ برس اپریل میں اس کے آباد شہر کفر قاسم سے حراست میں لیا تھا. اس پر الزام تھا کہ اس نے کفر قاسم کے جنوب میں راس العین کے مقام پر ایک یہودی خاتون کو خنجر گھونپ کر اسے زخمی کردیا تھا.اسرائیلیپراسیکیوٹر جنرل نے فلسطینی کیخلاف ایک لمبی چوڑی الزامات کی فہرست کے تحت فرد جرم عائد کرائی تھی جس میں یہودی آباد کاروں پر حملوں سمیت دیگر الزام بھی عائد کئے گئے تھے.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top