بھارتی سپریم کورٹ نے تمل ناڈو کی نامزد وزیر اعلی کو 4سال کی سزا سنادی، 10کروڑ روپے جرمانہ بھی عائد

1

نئی دہلی (قدرت روزنامہ15فروری2017) بھارتی ریاست تمل ناڈو میں سیاسی تعطل کے درمیان سپریم کورٹ نے وہاں کی نامزد وزیر اعلی ششی کلا کو آمدنی سے زیادہ جائیداد رکھنے کے معاملے میں مجرم قرار دیتے ہوئے 4سال کی سزا سنادی .غیر ملکی میڈیا کے مطابقبھارت کی جنوبی ریاست تمل ناڈو میں سیاسی تعطل کے درمیان سپریم کورٹ نے وہاں کی نامزد وزیر اعلی ششی کلا کو آمدنی سے زیادہ جائیداد رکھنے کے معاملے میں مجرم قرار دیدیا ہے .

عدالتِ عظمی کے مطابق ششی کلا کو اب سرینڈر کرنا ہوگا کیونکہ کورٹ نے انھیں چار سال کی سزا سنائی ہے. اس کے علاوہ ان پر10 کروڑ روپے جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے.سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ کا فیصلہ پلٹ دیا ہے اور ٹرائل کورٹ کے فیصلے کو برقرار رکھا ہے. ٹرائل کورٹ کے جج نے آمدنی سے زیادہ جائیداد کے معاملے میں جے للتا اور ششی کلا کو مجرم قرار دیا تھا.عدالت نے جے للتا کو ان کے انتقال کے بعد بری قرار دیا ہے لیکن باقی تینوں ملزمان کو تین ہفتے کے اندر کرناٹک ہائی کورٹ میں سرینڈر کرنے کے لیے کہا ہے.جے للتا اور ششی کلا کے علاوہ دو دیگر ملزمان میں وی این سدھارن اور یلور اسی شامل ہیں. عدالت نے تینوں ملزمان کو ذیلی عدالت میں سرینڈر کرنے کیلئے کہا ہے. یہ مقدمہ بی جے پی کے رہنما سبرامنیم سوامی نے دائر کیا تھا وہ مقدمہ دائر کرتے وقت پارٹی کے چیئر مین تھے. انہوں نے فیصلہ آنے ے بعد ٹویٹ کیا کہ 20 سال بعد بالآخر میری جیت ہوئی.عدالت کا فیصلہ آںے میں 19 سال لگ گئے. تمل ناڈو کی سابق وزیر اعلیٰ جے للتا کے انتقال کے بعد ششی کلا اے آئی اے ڈی ایم کے اراکین اسمبلی کی لیڈر منتخب کی گئی تھیں. اس سے پہلے انہیں پارٹے کا جنرل سیکریٹری بنایا گیا تھا. سابق نگراں وزیر اعلیٰ پنیر سلوم کے لئے بظاہر اب راستہ ہموار نظر آتا ہے.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top