بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی مسلمانوں کے خلاف پھیلائی ہوئی نفرت اب بھارتی ایوانوں سے نکل کر ممبئی یونیورسٹی تک جا پہنچی

15

ممبئی (قدرت روزنامہ11-جنوری-2017)بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی مسلمانوں کے خلاف پھیلائی ہوئی نفرت اب بھارتی ایوانوں سے نکل کر ممبئی یونیورسٹی تک جا پہنچی ، یونیورسٹی نے ایک مسلمان طالب علم کو باکسنگ مقابلوں سے صرف اس وجہ سے باہر کا راستہ دکھادیا کیونکہ اس نے داڑھی کٹوانے سے صاف طور پر انکار کردیا تھا. بھارت کے معروف اخبار’’ ہندوستان ٹائمز‘‘ کی رپورٹ کے مطابق ممبئی یونیورسٹی  کے جی آر پاٹیل کالج کے بی کام کے طالب علم سید عمران علی گزشتہ پیر کو ایک میچ میں حصہ لینے کیلئے میرین لین میں واقع کالج کے سپورٹس پویلین پہنچے،لیکن یونیورسٹی حکام نے یہ کہتے ہوئے ان کو مقابلے میں حصہ لینے سے روک دیا کہ پہلے وہ داڑھی کٹوائیں ورنہ داڑھی کٹوائے بغیر ان کو مقابلہ میں شریک نہیں ہونے دیا جائے گا، جس پر مسلمان طالب علم عمران علی نے داڑھی کٹوانے سے انکار کر دیا اور مقابلے کی دوڑ سے باہر ہو گیا .

ممبئی یونیورسٹی میں فزیکل ایجوکیشن اینڈ سپورٹس کے ڈائریکٹر اتم کیندر کے مطابق ہندوستانی باکسنگ میں باکسر کو مقابلہ سے پہلے کلین شیو ہونا ضروری ہے.دوسری طرف مسلمان باکسر سیدعمران علی کا کہنا ہے وہ گزشتہ 7سالوں سے ریاست سے لے کر قومی سطح تک کے کراٹے ، تیکواندو اور باکسنگ مقابلوں میں حصہ لیتے آ رہے ہیں ، لیکن ان کی داڑھی کبھی کوئی مسئلہ نہیں بنی. خیال رہے کہ عمران ممبئی میں مارشل آرٹس ٹریننگ سینٹر بھی چلاتے ہیں...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top