ْیومِ یکجہتی کشمیرمنانے کے لیے پاکستانی حکومت، فوج اور عوام کے دل کی عمیق گہرائیوں سے شکر گزار ہیں، سید علی گیلانی، پاکستان مسئلہ کشمیر کا ایک اہم فریق ہے اور اس تنازعے کا حتمی حل پاکستان کی شمولیت کے بغیر ممکن نہیں

سرینگر(قدرت روزنامہ05فروري2017)مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے 5فروری کو یومِ یکجہتی کشمیرمنانے کے لیے پاکستانی حکومت، فوج اور عوام کا دل کی عمیق گہرائیوں سے شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیری عوام گزشتہ70سال سے اپنے حقِ خودارادیت کے لیے ِ جدوجہدکررہے ہیں اور اس جدوجہد میں پاکستان روزِ اول سے ان کی سیاسی، سفارتی اور اخلاقی سطح پر مدد کرتا آرہا ہے.کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق سید علی گیلانی نے سرینگر سے جاری ایک بیان میں کہا کہ کشمیری قوم اپنی آزادی کے لیے دنیا کی ایک بڑی فوجی طاقت کے ساتھ نبرد آزما ہے اور اس جدوجہد میں پاکستان دنیا کا وہ واحد ملک ہے جو ان کے حقِ خودارادیت کو خود بھی تسلیم کرتا ہے اور عالمی برادری کے سامنے اس کی وکالت بھی کرتا ہے.

انہوں نے کہا کشمیر کے حوالے سے زیادہ سرگرم کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے.انہوں نے پاکستان پر زوردیا کہ دنیا بھر میں قائم اپنے سفارت خانوں اور سفارتی چینلوں کو زیادہ متحرک کرے اور انہیں کشمیریوں کی جدوجہد اور جموں وکشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو اُجاگر کرانے کی ذمہ داری سونپ دے. انہوںنے پاکستانی حکمرانوں پر زوردیا کہ وہ اپنی کشمیر پالیسی میں میں تسلسل اور استحکام پیدا کریں. سید علی گیلانی نے کہا کہ کشمیریوں کی جدوجہد مبنی برحق ہے جس کو عالمی سطح پر تسلیم کیا گیا ہے. انہوں نے کہا کہ پاکستان مسئلہ کشمیر کا ایک اہم فریق ہے اور اس تنازعے کا حتمی حل پاکستان کی شمولیت کے بغیر ممکن نہیں. لہٰذا پاکستان کو جرأت اور حوصلے کے ساتھ اپنے موقف آگے بڑھانے کی ضڑورت ہے اور اس میں کسی قسم کی کمزوری اور لچک کا مظاہرہ نہیں کیا جانا چاہئے. انہوں نی سابق امیر جماعت اسلامی پاکستان مرحوم قاضی حسین احمد کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ کشمیری قوم مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ان کی والہانہ وابستگی اور گراں قدر خدمات کو کبھی فراموش نہیں کرسکتی ہے.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top