نوجوان لڑکی مورگن میکلین اور اس کی فیملی کو اس شخص کی تلاش ہے جس نے کار حادثے کے بعد اسے بروقت طبی امداد دے کر اس کی جان بچائی

n8

لندن(قدرت روزنامہ04فروری2017) نوجوان لڑکی مورگن میکلین اور اس کی فیملی کو اس شخص کی تلاش ہے جس نے کار حادثے کے بعد اسے بروقت طبی امداد دے کر اس کی جان بچائی. تفصیلات کے مطابق 16سالہ مورگن اپنے موبائل میں اس قدر گُم تھی کہ اسے سڑک کا احساس ہی نہ ہوا اور وہ ایک حادثے کا شکارہوگئی.

وہ قومہ میں چلی گئی جبکہ اس کے سر میں اندرونی طور پر خون بھی بہہ گیا.اسے طبی امداد دینے والے ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ وہ خوش قسمت تھی کہ اسے لانے والے انسان نے بروقت طبی امداد دی اور ساتھ ہی اس کے دماغ کی رگیں صاف رکھیں جس سے وہاں ہوا جاتی رہی اور وہ موت کے منہ میں جانے سے بچ گئی. ان کا خیال ہے کہ مورگن کو لانے والا کوئی ڈاکٹر تھا اور اس وجہ سے اس کی جان بچ گئی.”مجھے یقین ہے کہ اگر اس مسیحا نے مجھے طبی امداد نہ دی ہوتی تومیں آج زندہ نہ ہوتی.“      
n9
مورگن کی 36سالہ ماں ٹریسا کاکہنا ہے کہ ڈاکٹروں نے اسے بتایا ہے کہ اگر وہ انجانے شخص اسے بروقت طبی امداد نہ دیتا اور وقت پر ہسپتال نی لے آتاتو آج اس کی بیٹی زندہ نہ ہوتی. ”میں اس انسان کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہوں جس کی وجہ سے میری بیٹی زندہ ہے .“یہ واقعہ سکاٹ لینڈ کے شہر میں پیش آیا،پولیس کاکہنا ہے کہ ابھی تک یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ گاڑی چلانے والا ڈرائیور کون تھا اور ابھی تک کوئی کوئی مقدمہ درج نہیں کیاگیا.”جس شخص کی گاڑی کی ٹکر سے مورگن زخمی ہوئی وہی انسان اس کی جان بچانے کا باعث بنااور یہ ایک قابل ستائش بات ہے.“مورگن کی والدہ کاکہنا ہے کہ وہ اور اس کی بیٹی اس انجانے سے بالکل بھی ناراض نہیں بلکہ وہ اس سے مل کر اس کا شکریہ ادا کرنا چاہتے ہیں.
n10
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top