ہندو مذہب چھوڑ کر سعودی عرب میں اسلام قبول کرنے والے نوجوان نے جان دیدی لیکن کلمہ توحید نہ چھوڑا

نئی دہلی(قدرت روزنامہ03فروري2017) سعودی عرب میں اسلامی تعلیمات سے متاثر ہو کر اسلام قبول کرنے والے نومسلم شخص کو واپس بھارت آنے پر شہید کر دیا گیا،اس سے پہلے ہندو انتہاء پسندوں نے اسے دھمکیاں بھی دی تھیں تاہم نومسلم فیصل کا کہنا تھا کہ اگر ہندو اسے قتل کرنا چاہتے ہیں تو کر گزریں، اسے کسی چیز کا خوف نہیں. دنیا نیوز کے مطابق نوکری کے سلسلے میں سعودی عرب میں32سالہ انیش کمار نے مسلمانوں کی تعلیمات سے متاثر ہو کر اسلام قبول کر لیا اور نیا نام فیصل رکھا.

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق فیصل نامی اس نوجوان کا تعلق بھارتی ریاست کیرالہ سے تھا اور وہ رواں سال اگست میں چھٹیوں پر وطن واپس آیا تھا تاہم واپس آتے ہی جب ہندو انتہاء پسندوں کو اس کے اسلام لانے کی خبر ملی تو انہوں نے اسے قتل کرنے دھمکیاں دینا شروع کر دیں . فیصل نے اس سلسلے میں مقامی عالم دین سے ملاقات کی جنہوں نے اسے اپنی کمیونٹی سے مدد حاصل کرنے کا مشورہ دیا تاہم سینے میں اسلام کی شمع جلنے کے بعد فیصل کی تو جیسے کایا ہی پلٹ گئی تھی.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top