افغانستان میں ایک شکی مزاج شوہر نے اپنی بیوی کو ایسی بربریت کا نشانہ بنا ڈالا کہ سن کر ہی روح کانپ جائے

کابل(قدرت روزنامہ02فروري2017)شکی مزاج شوہروں کے بیویوں پر مظالم کی خبریں ہمارے ہاں بھی بہت آتی رہتی ہیں مگرگزشتہ دنوں افغانستان میں ایک شکی مزاج شوہر نے اپنی بیوی کو ایسی بربریت کا نشانہ بنا ڈالا کہ سن کر ہی روح کانپ جائے. میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق افغان صوبے بلخ کی زرینہ نامی لڑکی پر اس کا شوہر شک کرتا تھا.

ایک رات وہ سو رہے تھے کہ آدھی رات کو ملزم نے اسے نیند سے بیدار کیا اور اس پر دوسرے مردوں سے باتیں کرنے کا الزام لگا کر تشدد شروع کر دیا. پھر ملزم نے اس کے ہاتھ پاﺅں باندھ کر اس کے کان کاٹ ڈالے اور فرار ہو گیا. زرینہ کی انتہائی کم عمری میں اس سے شادی ہوئی تھی. شادی کے وقت اس کی عمر محض 13برس تھی.

n7

 رپورٹ کے مطابق ہسپتال میں برطانوی نشریاتی ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے زرینہ نے بتایا کہ ”میرا شوہر ایک شکی مزاج شخص تھا. وہ بلاوجہ مجھ پر شک کرتا تھا. میں نے کوئی گناہ نہیں کیا، مجھے اب تک نہیں سمجھ پائی کہ اس نے میرے ساتھ یہ سلوک کیوں کیا ہے. وہ مجھے میرے والدین کے گھر جانے سے منع کرتا تھا اور الزام لگاتا تھا کہ جب میں ان کے گھر جاتی ہوں تو غیرمردوں سے باتیں کرتی ہوں. اس پر ہمارا جھگڑا بھی ہوتا تھااور میں نے اس سے طلاق کا مطالبہ بھی کیا تھا.“ افغانستان میں یہ اپنی نوعیت کا واحد واقعہ نہیں ہے. گزشتہ سال جنوری میں ایک شکی مزاج شوہر نے غیرمردوں سے باتیں کرنے کے الزام میں 20سالہ ریزہ گل نامی اپنی بیوی کی ناک کاٹ دی تھی.
n8
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top