بھارتی ریاست بہار کے ضلع مظفر پور میں گزشتہ دو دہائیوں سے بچوں کی اموات خالی پیٹ لیچی کھانے سے ہو رہی ہے

اسلام آباد(قدرت روزنامہ02فروري2017) برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق سائسندانوں کا کہنا ہے کہ بھارتی ریاست بہار کے ضلع مظفر پور میں گزشتہ دو دہائیوں سے بچوں کی اموات خالی پیٹ لیچی کھانے سے ہو رہی ہے جس میں ایک زہریلا کیمیکل پایا جاتا ہے. سائنسدانوں کے مطابق اس علاقے میں پیدا ہونے والی لیچی میں ہائپو گلائیسین اے نامی

زہریلا کیمیکل زیادہ مقدار میں پایا جاتا ہے جس کی وجہ سے بچے اسے کھانے کی وجہ سے بیمار پڑتے ہیں اور بعد ازاں ان کی موت واقع ہو جاتی ہے.

رپورٹ کے مطابق لیچی کھانے سے بیمار ہونے والے بچوں کو جب ہسپتال میں علاج کے لیے لایا گیا تو زیادہ تر بچوں کے خون اور پیشاب کے ٹیسٹ سے پتہ چلا کہ ان میں ان کیمیائی عناصر کی مقدار موجود تھی. ان میں سے زیادہ تر بچوں نے کھانے کی بجائے زیادہ مقدار میں لیچی کھائی تھی. ایسی صورت میں ان عناصر کا اثر زیادہ مہلک ہوتا ہے. سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ بچوں کو محدود مقدار میں لیچی دی جائے اور اس سے قبل متوازن غذا ضرور لی جائے.واضح رہے کہ یہ پھل پاکستان میں بھی بے حد پسند کیا جا تا ہے،

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top