ناقص کارکردگی اور ناقص کپتانی کے باعث پاکستان کرکٹ کو شدید مشکلات کا شکار ہیں

لاہور (قدرت روزنامہ03فروري2017) ناقص کارکردگی اور ناقص کپتانی کے باعث پاکستان کرکٹ کو شدید مشکلات کا شکار ہیں لیکن یہ معاملات کس حد تک خراب ہو چکے ہیں اور بہترین کپتان کی عدم دستیابی کی معاملہ کس قدر گھمبیر صورتحال اختیار کر چکا ہے اس کا اندازہ آپ کو پی ایس ایل کی ٹیموں کی کپتانی سے متعلق حقائق جان کر بخوبی ہو جائے گا.

 تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے پہلے سیزن میں تمام ٹیموں کے کپتان پاکستانی کھلاڑی تھی لیکن بدقسمتی سے اس سال پانچ میں سے 3 ٹیموں کی قیادت غیر ملکی کھلاڑی کر رہے ہیں.
اس سے بھی شرمناک بات یہ ہے کہ ان ٹیموں میں پاکستان کے وہ کھلاڑی بھی شامل ہیں جو قومی ٹیم کی کپتانی بھی کر چکے ہیں لیکن حقیقت میں وہ اس قدر نااہل ہیں کہ لیگ کرکٹ ٹیم کی کپتانی بھی انہیں نہیں سونپی گئی. پشاور زلمی کی ٹیم، جس میں سٹار آل راﺅنڈر اور سابق کپتان شاہد آفریدی اور محمد حفیظ بھی شامل ہیں، کی قیادت ویسٹ انڈیز کے آل راﺅنڈر ڈیرن سیمی کریں گے. اپنی قومی ٹیم کو 2012ءاور 2016ءمیں ٹی 20 ورلڈکپ جتوانے والے 33 سالہ ڈیرن سیمی کو کپتانی کی پیشکش خود شاہد آفریدی نے کی جو پہلے سیزن میں ٹیم کی قیادت کر چکے ہیں. دوسری جانب پاکستان ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق کی قیادت میں اسلام آباد یونائیٹڈ نے پہلے سیزن کی ٹرافی اپنے نام کی تھی اور خوشی کی بات یہ ہے کہ رواں سیزن میں بھی وہ ہی ٹیم کی قیادت کر رہے ہیں. کراچی کنگز کی کپتانی کا معاملہ پہلے سیزن میں اس وقت کشیدہ صورتحال اختیار کر گیا تھا جب انگلش کھلاڑی روی بوپارا اور شعیب ملک کے درمیان تکرار ہوئی اور ایک دوسرے پر الزامات لگائے گئے تھے تاہم اس مرتبہ ٹیم کی قیادت سری لنکا کے سابق کپتان کمار سنگاکارا کر رہے ہیں. 39 سالہ کمار سنگاکارا ہر طرح کی انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے چکے ہیں. اس سیزن میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی کپتانی بھی پہلے سیزن کی طرح سرفراز احمد ہی کر رہے ہیں. سرفراز احمد پاکستان ٹی 20 ٹیم کے کپتان ہے اور ون ڈے ٹیم کے نائب کپتان ہیں . 29 سالہ سرفراز احمد کے پاس پی ایس ایل میں کم عمر ترین کپتان ہونے کا اعزاز بھی ہے.
 قومی ون ڈے ٹیم کی قیادت بچانے کی فکر میں مبتلا اظہر علی نے پچھلے سیزن میں لاہور قلندرز کی قیادت کی تھی تاہم اب ان سے بھی یہ ذمہ داری لے لی گئی ہے اور اس سال ان کی جگہ نیوزی لینڈ کے برینڈن میکالم ٹیم کی قیادت کر رہے ہیں. 35 سالہ برینڈن میکالم کی قیادت میں نیوزی لینڈ کی ٹیم پہلی مرتبہ 2015ءورلڈکپ کے فائنل میں پہنچی تھی جہاں انہیں بالآخر آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست ہوئی تھی. مکالم بھی گزشتہ سال انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے چکے ہیں.
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top