جب ایک کرب پتی لڑکی نے مولانا طارق جمیل سے ایسا کیا سوال پوچھا کہ وہ سن کر ایکدم رونے لگا

اسلام آباد(قدرت روزنامہ13فروری2017)جب ایک کرب پتی لڑکی نے مولانا طارق جمیل سے ایسا کیا سوال پوچھا کہ وہ سن کر ایکدم رونے لگا یہ لڑکی تھی کون ضرور پڑھیں . مولانا طارق جمیل نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم تقریبا بھولا چکے اسمیں میرے نبی ؐ والے اخلا ق بہت اعلیٰ درجے کی چیز ہے اس کومیرے بچوں سیکھوں اس سے تمہاری زندگی خوبصورت بنے گی کل تم باپ بننے والے ہوں یا بیویاں بننے والی ہیں کچھ بن چکے ہیں .

ایک ساتھ زندگی کیلئےمیرے نبیؐ والے اخلاق کے بغیر گزارا نہیں ہے .صرف پیسے سے زندگی نہیں گزرتی شکل وصورت سے زندگی نہیں گزرتی شکلیں بھی اپنی جازبیت ختم کردیتی ہے کچھ عرصے کے بعد اور پیسے کی کنک بھی انسان بھولا دیتا جب رویہ غلط ہوتے ہیں جب رویے سخت ہوتے ہیں مجھے کربوں پتی آدمی کی بیگم ملی اور رونا شروع کردیا اور کہا مولانا میری کوئی زندگی نہیں میرے خاوند کا رویہ میرے ساتھ ٹھیک نہیں ہے .اتنی دولت کے امبار اس عورت کیساتھ کچھ نہیں کررہا ہے کیونکہ خاوند کا رویہ ٹھیک نہیں ہے . تو میرے عزیز اپنے دفتروں ، گھروں اپنی مسجدوں اور اپنے ماحول کوبرداشت، درگزر سے آباد کرو معاف کرنے سے آباد کرو . میرے رب کی قسم معاف کرنے میں جومزا ہے وہ بدلہ لینے میں نہیں ہے چھوٹا بننے میں جو مزا ہے وہ بڑا بننے میں نہیں ہے . سینے سے لگانے میں جو مزا ہے وہ منہ پھیرنے میں نہیں ہے . آپ ہماری سرمایہ ہو آپ ہماری دولت ہو اللہ کا شکر ہے ہمارے پاس نوجوانوں کا بہت بڑا سرمایہ ہے سارا یورپ پھیرا ہو مائنس میں نسل جارہی ہے سکول بند ہورہے اور ہمارے ہر سال سکول کھلتے ہیں . اللہ کا فضل ہے . اللہ نے بہت بڑی دولت ہمیں دی لیکن اللہ کرے یہ دولت ہمارے کام آجائے ان کے اخلاق اچھے ہو ان کا کردار بلند ہو ابھی لڑکے لڑکیاں اکھٹے پڑھتے ہیں ہماری ایک حد فاصلہ ہے . اس کو کراس نہیں کرسکتے گرل فرینڈ اور بوئے فرئنڈ یورپ کا کلچرہے جس نے عورت کو عورت نہیں چھوڑا اور مرد کو مرد نہیں چھوڑا نہ وہ خاوند ہے نہ بھائی نہ باپ ہے وہ عورت نہ ماں ہے نہ بہن ہے بیوی ہے وہ ایک ٹشو ہے استعمال کرکے پھینک دیا جاتاہے دونوں کے کےرشتے بے غیرتی نے مٹادیئے میں اسپین میں تھا تو ان کا جو انسپکٹر جنرل پولیس مجھ ملنے کیلئے آگئے تو میں نے ان کو کہا کہ میں دوباتیں کہہ کر جارہاہوں جو آپ کے فائدے کی ہے ایک آپ لوگوں کا فیملی سسٹم ٹوٹ چکاہے جس سے آپ کی نسل تباہ ہوجائیگی ، دوسرا میں دیکھ رہاہوں آپ کے پارکس اور بازار میں پھیر ا ہوں آپ کے نوجوانوں نظر نہیں آرہے ہیں آپ کے نوجوان نسل گیف آرہاہے سر پکڑ کر بیٹھ گئے انہوں نے کہا کہ یہ دونوں مسائل آج ہمارے لیےدرد سر بنئے ہوئے ہیں ہماری نسل ختم ہورہی ہے ہماری فیملی سسٹم ختم ہوچکا ہے ہماری ایک حد ہے ہماری نظر نیچے ہوتی اور ہم حیا کی چادر سے باہر نہیں نکلتے ہیں . بے خیائی جس معاشرے میں پھیلتی ہے اس معاشرے کو اللہ پنپنے نہیں دیتا

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top