حضرت ابن عمر رضی اللہ عنہ کی یہ عادت تھی کہ جب انہیں اپنے مال میں سے کوئی چیز زیادہ پسند آنے لگتی تو اسے فوراً اللہ کے نام پر خرچ کردیتے

اسلام آباد (قدرت روزنامہ07جنوری2017)حضرت ابن عمر رضی اللہ عنہ کی یہ عادت تھی کہ جب انہیں اپنے مال میں سے کوئی چیز زیادہ پسند آنے لگتی تو اسے فوراً اللہ کے نام پر خرچ کردیتے اور یوں اللہ کا قرب حاصل کرلیتے اور ان کے غلام بھی ان کی اس عادت شریفہ سے واقف ہوگئے تھے. چنانچہ بعض دفعہ ان کے غلام نیک اعمال میں خوب زور دکھاتے اور ہر وقت مسجد میں اعمال میں لگے رہتے.

جب حضرت ابن عمر رضی اللہ عنہ ان کو اس اچھی حالت پر دیکھتے تو ان کو آزاد کردیتے.

اس پر ان کے ساتھی ان سے کہتے اے ابوعبدالرحمن اللہ کی قسم! یہ لوگ تو اس طرح آپ کو دھوکہ دے جاتے ہیں (انہیں مسجد سے اور مسجد والے اعمال سے دلی لگاؤ کوئی نہیں ہے صرف آپ کو دکھانے کیلئے یہ کرتے ہیں تاکہ آپ خوش ہوکر انہیں آزاد کردیں) تو آپ فرماتے کہ ہمیں جو اللہ کے اعمال میں لگ کر دھوکہ دے گا ہم اللہ کیلئے اس سے دھوکہ کھاجائیں گے.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top