مردہ دل کی پہچان

اسلام آباد (قدرت روزنامہ01فروري2017)ایک شخص حضرت حسن بصری ؒ کے پاس آیا اور کہنے لگا حضرت ! پتہ نہیں ہمیں کیا ہوگیا ہے ؟ ہمارے دل تو شاید سو گئے ہیں، حضرت نے پوچھا وہ کیسے ؟ کہا ، آپ وعظ فرماتے ہیں قران وحدیث بیان کرتے ہیں مگر ہمارے دلوں پر اثر نہیں ہوتا ، یوں لگتا ہے کہ ہمارے دل سوگئے حضرت نے فرمایا ، بھائی اگر یہ حال ہے تو پھر نہ کہو کہ دل

سو گئے بلکہ یوں کہو کہ دل مرگئے ،اس نے کہا ، حضرت دل مر کیسے گئے ؟ فرمایا بھئی ! جو سویا ہوا ہو ا سے جھنجوڑا جائے تو وہ جاگ اُٹھتا ہے اور جو جھنجھوڑ نے سے بھی نہ جاگے وہ سویا ہوا نہیں وہ تو مویا ہوتاہے قرآن وحدیچ جسے سنائی جائے اور وہ اگر پھر بھی نہ جاگے تو وہ سویا ہو انہیں بلکہ مرا ہوا ہوتاہے .(خطبات ذوالفقارص ۵۲/۹)

.
.


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top