لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں متعدد افراد شہید ہو چکے ہیں

10

سیہون شریف (قدرت روزنامہ16-فروری-2017) لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں متعدد افراد شہید ہو چکے ہیں، اس حوالے سے مصدقہ اعداد وشمار سامنے نہیں آ سکے تاہم مختلف ذمہ داران  کے بیانات دیکھ کر لگتا ہے کہ یہ پاکستان کی تاریخ کے افسوسناک ترین واقعات میں سے ایک تھا. ایس ایچ او سیہون شریف رسول بخش نے نجی ٹی وی ڈان نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں اب تک 100 سے زائد افراد شہید ہو چکے ہیں جبکہ شہادتوں کی تعداد میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے.

دوسری جانب ایک ریسکیو ورکر نے بتایا کہ دھماکے کے بعد کم از کم 65 افراد شہید ہوچکے ہیں جبکہ اس دھماکے کے نتیجے میں 500 سے 530 لوگ شدید زخمی ہیں. علاوہ ازیں درگاہ کے سجادہ نشین ولی محمد نے 455 شہادتوں کی تصدیق کی ہے جبکہ ایم ایس سول ہسپتال سیہون شریف نے 30 شہادتوں کی تصدیق کرتے ہوئے کہاہے کہ زخمیوں کی تعداد 100 سے زائد ہے جن میں سے اکثر کی حالت تشویشناک ہے.ایدھی سنٹر کے ترجمان نے بھی 40 شہادتوں کی تصدیق کردی ہے. وزیر صحت سندھ سکندر میندھرو کا کہنا ہے کہ لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں 30 سے 35 شہادتیں ہو چکی ہیں جبکہ 60 افراد زخمی ہیں...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top