کراچی یونیورسٹی کے ایک اہلکار كودن دیہاڑے رشوت لیتے ہوئے کیمرے کی آنکھ نے پکڑلیا

کراچی (قدرت روزنامہ08فروری2017)کراچی یونیورسٹی کے ایک اہلکار نے صرف 100روپے میں اپنا’ایمان‘ بیچ دیا اوردن دیہاڑے رشوت لیتے ہوئے کیمرے کی آنکھ نے پکڑلیااور اب اس کی ویڈیوسوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی.

 تفصیلات کے مطابق جامعہ کراچی کے شعبہ بین الاقوامی تعلقات کے کلرک کی رشوت مانگتے ہوئے ویڈیو منظر عام پر آگئی جبکہ ویڈیو بنانے والے طلبہ کا کہنا تھا کہ کلرک فارم جمع کرنے کے لیے ہرطالب علم سے 100 روپے لیتے ہیں، کلرک موصوف کاکہناتھاکہ 100روپے سروس چارجز ہیں، اگر نہیں دیئے گئے تو فارم جمع نہیں کریں گے ، اگر وی سی یا چیئرمین کے پاس بھی جانا ہے تو چلے جائیں، انہی سے کروالیں.
 رجسٹرار معظم علی کا کہنا ہے کہ رشوت کا واقعہ محمود الحسن لائبریری میں پیش آیا جس کی رپورٹ مانگ لی گئی ہے اور رشوت ستانی میں ملوث کلرک کے خلاف سخت ایکشن ہوگا. کراچی یونیورسٹی کے وائس چانسلر نے بھی ویڈیو سامنے آنے کے بعد اس کا نوٹس لے لیا اور رپورٹ طلب کرلی .
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top