سونو نگھم نے اپنے سر کے بال کٹوا لیے ، تصاویر جاری

ممبئی (قدرت روزنامہ19اپریل2017)بھارتی گلوکار سونونگھم نے اپنے سر کے بال کٹوا دئے جس کی تصاویر بھی جاری کر دی گئی ہیں. تفصیلات کے مطابق سونو نگھم کے اذان مخالف بیانات پر ایک مولوی نے فتویٰ دیتے ہوئے کہاکہ جو شخص سونو نگھم کے بال کاٹے گا اور انہیں جوتوں کا ہار پہنائے گا اسے میں خود دس لاکھ روپے انعام دوں گا جس کے جواب میں سونو نگھم نے کہا کہ مولوی! اپنے دس لاکھ تیار رکھو میں آج ہی اپنے گھر پر ایک عالم کو بلوا کر اپنے بال کٹوا دیتا ہوں.

وعدے کے مطابق سونو نگھم نے میڈیا کی موجود گی میں اپنے سر کے بال کٹوادئے. میڈیا سے گفتگو میں سونو نگھم کا کہنا تھا کہ لاﺅڈ اسپیکر نہیں بلکہ اذان ضروری ہے. ٹھیک اسی طرح آرتی ضروری ہے نہ کہ لاﺅڈ اسپیکر. ان کا کہنا تھا کہ میں نہایت سیکولر ہوں. میں اپنا سر منڈوا دیتا ہوں . یہ کوئی چیلنج نہیں ہے بلکہ ایک درخواست ہے کہ آپ اس طرح کے بیانات سے اس ملک کو کیا بنا رہے ہیں؟ میں یہ نہیں کہتا کہ میرا مذہب پرفیکٹ ہے لیکن آپ کا مذہب بھی پرفیکٹ نہیں ہے.انہوںنے کہا کہ جس نے میرے بال کاٹے وہ ایک مسلمان ہے اور میں ہندو مذہب سے تعلق رکھتا ہوں.میری کسی سے کوئی دشمنی نہیں ہے.فتویٰ کی زبان کو پیار کی زبان میں بدلا جا سکتا ہے. سیکولر ہونے کا مطلب یہ ہے کہ ہم ایک دوسرے کو سمجھیں نہ کہ یہ کہیں کہ صرف میں صحیح ہوں.ہر ایک کو اپنے خیالات کا اظہار کرنے کا حق ہے اور میں نے اذان نہیں بلکہ لاﺅڈ اسپیکر کے خلاف بیان دیا تھا. میںنے ایک سماجی مسئلہ اجاگر کیا جسے مذہبی رنگ دے دیا گیا ہے. انہوں نے مزید کہا کہ جب میں جاگران بھی گاتا ہوں تو سرکاری اصولوں کے مطابق رات دس بجے سے پہلے گاتا ہوں .اور اس بات کو یقینی بناتا ہوں کہ اصولوں کی پیروی کی جائے...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top