کسی سے دبنے کی ضرورت نہیں،میر اتو شادی اور الیکشن پر بھی کوئی خرچ نہیں آیا تھا: سینیٹر سراج الحق

لاہور(قدرت روزنامہ06فروری2017)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ پانامہ کیس سے ن لیگ خطرے سے دو چار ہے،ن لیگ نے اپنی مہم میرے خلاف چلائی ہے تو یہ سب چوروں کا اتحاد ہے میں نے سب کے احتساب کی بات کی ہے،خواجہ آصف نے اسمبلی میں غلط بات کی ہے،میرا دامن صاف ہے کسی سے دبنے کی کیا ضرورت ہے،میرا شادی اور الیکشن پر کوئی خرچ نہیں آیا ہے،انتخابی مہم میں حلقے کے افراد نے ہی تمام خرچ برداشت کیا ہے.

 امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے پر وگرام”خبر یہ ہے“میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کی آزادی ریاست کی ذمہ داری ہے،بھارت چاہتا ہے پیاز اور آلو کی تو بات کی جائے لیکن کشمیر کی بات نہ کیا جائے،دنیا کو سمجھانے کی ضرورت ہے کہ کشمیر میں جاری جدوجہد دہشتگردی نہیں ہے تحریک آزادی ہے.
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ہے کہ حکومت ڈپریشن کا شکار ہے،ن لیگ خطرے سے دو چار ہے،ن لیگ نے اپنی مہم میرے خلاف چلائی ہے تو یہ سب چوروں کا اتحاد ہے میں نے سب کے احتساب کی بات کی ہے،خواجہ آصف نے اسمبلی میں غلط بات کی ہے. میں جمہوریت پر یقین رکھتا ہوں،میں نے جو بھی کوششیں کی پاکستان کے آئین کو بچانے کیلئے کی ہیں،حکومت کو نہیں،دھرنے کے دوران پولیس کو استعمال کرنے کی کوشش کی گئی . انہوں نے کہا ہے کہ سیاسی لیڈر قوم کا استاد ہوتا ہے،انبیاءکاکام ہے لیکن یہاں تو لوگوں نے عیاری اور مکاری سمجھ لیا ہے،حکومت اچھا کام کرے ہم سلیوٹ کریں گے،عافیہ صدیقی کی رہائی اور کشمیر کی آزادی کیلئے جدوجہد کرے تو ہم شاباش دیں گے،میں نے تمام سیاسی جماعتوں کو مل کر جدوجہد کرنی چاہیے،جب آصف زرداری صاحب ملنے آئے تو ان کو بھی سوشل ایجنڈا بنانے کا مشورہ دیا ہے،ان کو کہا عوام کے مفاد میں کام کریں،میرا شادی اور الیکشن پر کوئی خرچ نہیں آیا ہے،انتخابی مہم میں حلقے کے افراد نے ہی تمام خرچ برداشت کیا ہے. ایک سوال کے جواب میں کہا ہے جو لوگ ملک کیلئے کچھ کرنا چاہتے ہیں میں ان کو جماعت اسلامی میں لے کر الیکشن میں امیدوار کھڑا کرنا چاہتا ہوں، ہم چاہتے ہیں مظلوم لوگ ہیں وہ اکھٹے ہو جائیں،صرف مولانا حضرات کی ہی ہم نے جماعت نہیں بنانی ہے،ہمیں قوم کو مذہب او رغیر مذہب کی بنیاد پر تقسیم نہیں کرنا چاہیے،قائداعظم محمد علی جناحؒ کا بھی ایجنڈا اسلامی فلاحی ریاست تھا. افغانستان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کی پوری افغان قوم سے دوستی ہونی چاہیے،گل بدین حکمت یار پاکستان کا دوست ہے ان کا مین سٹریم سیاست میں آنا خوش آئند ہے.
اسلام ایک حقیقت ہے،جب روس ٹوٹا تو نیٹو کے سربراہ نے کہا تھا کہ اب ہم اسلام کے خلاف لڑیں گے،اب ٹرمپ بھی اسی ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں،ٹرمپ نے اپنے عزائم صاف بیان کردیے ہیں تو مسلمانوں میں اتحاد آئے گا،پوری مسلم دنیا میں اتحاد کی فضا قائم ہورہی ہے،ضرب عضب آپریشن سے بلا شک وشبہ کامیابیاں ملی ہیں.
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top