وزیر اعظم سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد وزارت عظمیٰ کے منصب پر براجمان رہنے کا جواز کھو چکے ہیں، پرویز مشرف

اسلام آباد (قدرت روزنامہ21اپریل2017)سابق صدر اورآل پاکستان مسلم لیگ کے سربراہ پرویز مشرف کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد وزارت عظمیٰ کے منصب پر براجمان رہنے کا جواز کھو چکے ہیں، سابق صدر کا کہنا تھا کہ حیران ہوں کہ مٹھائیاں کس بات پرتقسیم کی جا رہی ہیں، موجودہ وزیر اعظم کے ہوتے ہوئے ادارے غیرجانبدارانہ تحقیقات کیسے کر سکتے ہیں؟پرویز مشرف کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے ججوں نے نواز شریف کو صادق اور امین قرارنہیں دیا، مشترکہ تحقیقاتی ٹیم جرائم پیشہ ملزمان کے لئے بنائی جاتی ہے، حیران ہوں کہ مٹھائیاں کس بات پر تقسیم کی جا رہی ہیں. نواز شریف فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہو جائیں.

پارٹی رہنماؤں سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے پرویز مشرف کا کہنا تھا کہ عدالت عالیہ کے پانچ میں سے دو اعلیٰ ججوں نے کہا ہے کہ نواز شریف صادق اور امین نہیں ہیں، دیگر تین جج بھی ان کے پیش کردہ ثبوتوں سے مطمئن نہیں ہیں. پرویز مشرف کا مزید کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے احکامات سے صاف ظاہر ہے کہ پانامہ کیس کا فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے. انہوں نے بتایا کہ آل پاکستان مسلم لیگ اپنی مرکزی مجلس عاملہ کے اجلاس میں فیصلہ کرے گی کہ وزیراعظم کے استعفیٰ کے لئے چلائی جانے والی سیاسی جماعتوں کی تحریک کا ساتھ دیں یا نہ دیں...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top