عمران خان 28 اپریل کو کیا کرنے جا رہے ہیں؟ جان کر حکومت کے اوسان خطا ہو گئے

اسلام آباد(قدرت روزنامہ21اپریل2017)پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کے چیئرمین نے پارلیمنٹ کے باہر کے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ 28اپریل کو اسلام آباد میں جلسہ کریں گے ،جہاں وزیر اعظم سے استعفی کا مطالبہ کیا جائے گا.ان کا مزید کہنا تھا کہ نوازشریف کے ماتحت جے آئی ٹی کا کوئی فائدہ نہیں ہے .

آج تمام اپوزیشن جماعتیں نوازشریف سے استعفی پٌر متفق ہیں .سپریم کورٹ کا فیصلہ پڑھے بغیر مٹھائیاں بانٹنا شروع کر دیں. دو ججز نے کہا کہ تم نواز شریف جھوٹا ہے .اگر جمہوریت ہے تو پارلیمنٹ میں مجھے کیوں نہیں بولنے دیا گیا.ذرائع کے مطابق تحریک انصاف نے جلسے کودھرنے میں تبدیل کافیصلہ کرلیاہے اورپارٹی کے اجلاس میں طے کردہ معاملات کے تحت ابھی اس کوجلسے کانام دیاجارہاہے اورجلسہ ختم ہوتے ہی عمران خان پریڈگرائونڈمیں ہی وزیراعظم نوازشریف کے مستعفی ہونے تک دھرنے کااعلان کردینگے اس معاملے پرتحریک انصاف نے پاکستان پیپلزپارٹی کوبھی اعتماد میں لے لیاہے ..اگر جمہوریت ہے تو پارلیمنٹ میں مجھے کیوں نہیں بولنے دیا گیا.ذرائع کے مطابق تحریک انصاف نے جلسے کودھرنے میں تبدیل کافیصلہ کرلیاہے اورپارٹی کے اجلاس میں طے کردہ معاملات کے تحت ابھی اس کوجلسے کانام دیاجارہاہے اورجلسہ ختم ہوتے ہی عمران خان پریڈگرائونڈمیں ہی وزیراعظم نوازشریف کے مستعفی ہونے تک دھرنے کااعلان کردینگے اس معاملے پرتحریک انصاف نے پاکستان پیپلزپارٹی کوبھی اعتماد میں لے لیاہے ..اگر جمہوریت ہے تو پارلیمنٹ میں مجھے کیوں نہیں بولنے دیا گیا.ذرائع کے مطابق تحریک انصاف نے جلسے کودھرنے میں تبدیل کافیصلہ کرلیاہے اورپارٹی کے اجلاس میں طے کردہ معاملات کے تحت ابھی اس کوجلسے کانام دیاجارہاہے اورجلسہ ختم ہوتے ہی عمران خان پریڈگرائونڈمیں ہی وزیراعظم نوازشریف کے مستعفی ہونے تک دھرنے کااعلان کردینگے اس معاملے پرتحریک انصاف نے پاکستان پیپلزپارٹی کوبھی اعتماد میں لے لیاہے ..اگر جمہوریت ہے تو پارلیمنٹ میں مجھے کیوں نہیں بولنے دیا گیا.ذرائع کے مطابق تحریک انصاف نے جلسے کودھرنے میں تبدیل کافیصلہ کرلیاہے اورپارٹی کے اجلاس میں طے کردہ معاملات کے تحت ابھی اس کوجلسے کانام دیاجارہاہے اورجلسہ ختم ہوتے ہی عمران خان پریڈگرائونڈمیں ہی وزیراعظم نوازشریف کے مستعفی ہونے تک دھرنے کااعلان کردینگے اس معاملے پرتحریک انصاف نے پاکستان پیپلزپارٹی کوبھی اعتماد میں لے لیاہے ...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top