جو ریکارڈ موجود ہے اس پر جواب دوں گا اور 45 سال پرانا ریکارڈ عدالت میں پیش نہیں کیا جا سکتا۔ وکیل سلمان اکرم راجہ

b6

اسلام آباد(قدرت روزنامہ15فروری2017) پاناما کیس کی سماعت کے دوران حسین نواز کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے کہا کہ جو ریکارڈ موجود ہے اس پر جواب دوں گا اور 45 سال پرانا ریکارڈ عدالت میں پیش نہیں کیا جا سکتا.

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں پاناما کیس کی سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 5 رکنی بینچ کر رہا ہے جس میں وزیراعظم کے صاحبزادے حسین نواز کے وکیل سلمان اکرم راجہ دلائل دے رہے ہیں.

سماعت کے دوران سلمان اکرم راجہ نے کہا کہ 1999 میں شریف فیملی کا تمام ریکارڈ قبضے میں لے لیا گیا تھا جس کے باعث شریف فیملی کا ریکارڈ غائب ہو گیا، جو ریکارڈ موجود ہے اس پر عدالت میں جواب دوں گا کیونکہ 45 سال پرانا ریکارڈ عدالت میں پیش کرنا ممکن نہیں ہے.سلمان اکرم راجہ کا کہنا تھا کہ شریف فیملی پر عمومی الزامات عائد کئے گئے جبکہ حسین نواز کے انٹرویو کو سیاق و سباق کے مطابق دیکھا جائے. انہوں نے کہا کہ کیا انکوائری کے بغیر عدالت کسی فیصلے پر پہنچ سکتی ہے، میری رائے کے مطابق انکوائری کے بغیر کسی نتیجے پر نہیں پہنچا جا سکتا، وزیراعظم کے خلاف کوئی چارج نہیں اس لئے ان کے بچوں کے خلاف بھی کارروائی ممکن نہیں.

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے سلمان اکرم راجہ سے استفسار کیا کہ لندن میں 2 بچوں کے لئے 4 فلیٹس کا بندوبست کیوں کیا گیا جس پر سلمان اکرم راجہ نے جواب دیا کہ 2 نہیں 3 طالبعلم تھے، حمزہ شہباز کے لئے بھی ایک فلیٹ خریدا گیا تھا جس پر انہوں نے کہا کہ آج آپ ایک اور طالبعلم سامنے لے کر آ گئے ہیں. سلمان اکرم راجہ نے کہا کہ یقین سے نہیں کہہ سکتا لیکن میرا خیال ہے حمزہ شہباز بھی لندن میں طالبعلم تھے.جسٹس عظمت سعید شیخ نے پوچھا کہ سب باتیں مان لیں لیکن بتائیں کہ حسین نواز کی ملکیتی دستاویزات کہاں ہیں؟، سوال ایک ہی ہے جس کا جواب مچھلی کی طرح پلٹا نہیں جا رہا، کان وہاں سے پکڑیں یا یہاں سے بات وہی ہے. جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ حسین نواز کو ساری باتیں بتانے والاکون ہے؟ ہم پہلے دن سے جواب کے منتظر ہیں لیکن آپ ادھر ادھر چھلانگیں لگا رہے ہیں.واضح رہے کہ پاناما کیس کی سماعت 31 جنوری کو جسٹس عظمت سعید شیخ کے دل میں تکلیف کے باعث ملتوی ہو گئی تھی جس کے بعد انہیں دل کی سرجری کے لئے اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹرز نے انہیں کچھ روز آرام کا مشورہ دیا تھا.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top