وفاقی دارالحکومت میں دو معصوم بچوں میں ایڈز کی نشاندہی

b8

اسلام آباد(قدرت روزنامہ08فروری2017)وفاقی دارالحکومت میں دو معصوم بچوں میں ایڈز کی نشاندہی کے بعد سی ڈی اے اور وزارت کیڈ نے مشترکہ غیر قانونی بلڈ بنکوں کیخلاف سخت کارروائی کرنے کا فیصلہ کرلیا.

تفصیلات کے مطابق ایک سرکاری عہدیدار نے نام ظاہر نہ کر نے کی شرط پر بتایا کہ اس حوالے سے وزیر طارق فضل چوہدری نے میٹنگ کی جس میں انہیں بتایا گیا کہ اس وقت شہر میں تین بڑے ہسپتال پمز ، پولی کلینک اور سی ڈی اے ہیں جن میں خون کی منتقلی کا مرحلہ ہوتا ہے اس کے علاوہ 19پرائیویٹ میڈیکل بلڈ بنک شہر میں موجود ہیں جن پر سختی سے مانیٹرنگ کی ضرورت ہے جس کے بعد ڈاکٹر طارق فضل چوہدری نے سختی سے ہدایت کی کہ سرکاری ہسپتالوں میں شفاف خون کی منتقلی ہونی چاہیے جبکہ ڈسٹرکٹ انتظامیہ کو وزارت کیڈ نے پرائیویٹ میڈیکل بلڈ بنکوں کیخلاف کارروائی کی ہدایت کردی ہے.

ایگزیکٹو ڈائریکٹر سی ڈی اے ہسپتال کے ڈاکٹر فیاض لودھی کا کہنا ہے کہ ایڈز کے متاثرہ دو معصوم بہن بھائیوں کو ہسپتال سے ایڈز سنٹر منتقل کردیا گیا ہے اور اس حوالے سے میٹنگ بھی ہوئی ہے جس میں پرائیویٹ میڈیکل بلڈ بنکوں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ کیا گیا ہے. ڈاکٹر فیاض نے بتایا کہ وزیر کیڈ نے ایڈز وائرس کے تعین کے لئے ہسپتال کی ایک کمیٹی بھی بنائی ہے اس کے علاوہ وزیر کیڈ کو ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے بتایا گیا کہ دونوں بہن بھائیوں پر ہسپتال 25لاکھ روپے خرچ کرچکا ہے اور ہسپتال ریکارڈ کے مطابق سی ڈی اے ہسپتال میں دونوں مریض خون منتقلی کے دوران وائرس سے متاثر نہیں ہوئے اور تقریباً46مرتبہ ان بچوں کو خون لگایا گیا ہے. پمز کے ڈاکٹر الطاف حسین نے آن لائن کو بتایا کہ پمز میں تھیلی سیمیا کے شکار ہزاروں مریضوں کو چھان بین کے بعد صاف وشفاف تازہ خون میسر کیا جاتا ہے اور 200کے قریب مریضوں کو روزانہ کی بنیاد پر خون کی منتقلی ہوتی ہے .انہوں نے کہاکہ اس حوالے سے متعلقہ عہدیداروں کو سخت پالیسی بنانی چاہیے تاکہ مزید ایسے کیسز کا سد باب ہو سکے .

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top