جنسی ہراساں کیے جانے کا الزام لگانے والی پی ٹی وی کی اینکرز نوکریوں سے فارغ

اسلام آباد(قدرت روزنامہ05فروری2017) پی ٹی وی کے ڈائریکٹر کی جانب سے جنسی ہراساں کیے جانے کا انکشاف کرنے والی پی ٹی وی اینکرز تنزیلہ مظہر اور یشفین جمال کو سوشل میڈیا اور نجی ٹی وی چینلز کا سہارا لے کر اپنی مہم کو قومی نشریاتی ادارے کی ساکھ خراب کرنے کےلئے استعمال کرنے پر نوکریوں سے فارغ کر دیا گیا ہے. 24نومبر کو دونوں اینکرز یشفین جمال اور تنزیلہ مظہر نے الزام عائد کیا تھا کہ ڈائریکٹر پی ٹی وی آغا مسعود شورش نے انھیں جنسی ہراساں کیا ہے .
جس پر مسعود شورش کے خلاف تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا. تاہم معاملے کی انکوائری ہونے کے باوجود دونوں اینکرز نے اپنی مہم جاری رکھی . اس عمل کی تنبیہ کیے جانے کے باوجود دونوں اینکرز عدالتی احکامات پر عملدرآمد سے انکاری رہیں اور مسلسل نجی ٹی وی پروگراموں میں شرکت کرتی رہیں.جس پر نوٹس لے کر انھیں نوکری سے برطرف کر دیا گیا. ملزم کے وکیل نے استدعا کی تھی کہ الزامات کے باعث ان کے موکل کوملکی اور بین الاقوامی سطح پر ساکھ خراب ہونے سے بھی پریشانی کا سامنا ہے اور ان کی بیٹی ذہنی اذیت کا شکار ہے جبکہ انکوائری کے باوجود دونوں اینکرز ان کے موکل پر مزید بدنام کرنے پر تلی ہیں.
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top