چینی باشندوں نے چین کے نئے سال کی تقریبات اپنے گھروں میں منانے کے بجائے یہ چھٹیاں اپنے فرض کیلئے قربان کر دیں

اسلام آباد(قدرت روزنامہ03فروري2017)قراقرم ہائی وے پرکام تیزی سے جاری ،کم وقت میں سی پیک منصوبے کو مکمل کرنے کیلئے سینکڑوں چینی باشندوں نے چین کے نئے سال کی تقریبات اپنے گھروں میں منانے کے بجائے یہ چھٹیاں اپنے فرض کیلئے قربان کر دیں اور

پاکستان میں ہی رہ کر کام کرنے کو ترجیح دی تاکہ یہ منصوبہ جلد پایہ تکمیل کو پہنچ سکے.قراقرم ہائی وے واحد زمینی راستہ ہے جو پاکستان اورچین کو آپس میں جوڑتا ہے اور اس کے زریعے ہی دونوں ملکوں میں تجارت کی جاتی ہے.

پراجیکٹ کے تحت تعمیرکی جانے والی سڑکوں پرکام تیزی سے جاری ہے اوراس منصوبے کے پہلے مرحلے میں2013 کے دوران شمالی حصوں کو اپ گریڈ کیا گیا تھا اور دوسرے مرحلے میں ستمبر 2016 سے کام جاری ہے جس میں مختلف مقامات پرنئی سڑکوں کی تعمیرکی جارہی ہے جبکہ خیبرپختونخوا میں حویلیاں سے شاہ کوٹ تک بنائی نئی سڑک کی تعمیر کا کام جاری ہے.سی پیک منصوبے پر 900چینی باشندے کام کر رہے ہیں .منصوبے کو مکمل کرنے کیلئے 45مہینے کا عرصہ باقی رہ گیا . جس کے باعث چینی باشندوں نے مقرر مدت میں منصوبے کومکمل کرنے کیلئے اپنی چھٹیاں منسوخ کردی ہے. منصوبے پر 105پل اور67سرنگیں بنائی جائیں گی.بعض سرنگیں 1700میٹر طویل ہے جس کی وجہ سے پورے دن میں کوشش کے باوجود آدھے میٹر کی کھدائی ہو رہی ہے.چینی باشندے اپنے کام اور جذبے سے پر امید ہے کہ وہ مقرر مدت میں اس شاندار منصوبے کو مکمل کر لیں گے.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top