بالوں کو لمبا کرنے کے لئے لوگ کئی طرح کے ٹوٹکے اپناتے ہیں لیکن دبئی میں تو ہیر سیلونز نے سب کو پیچھے چھوڑ دیا

دبئی (قدرت روزنامہ16فروری2017) بالوں کو لمبا کرنے کے لئے لوگ کئی طرح کے ٹوٹکے اپناتے ہیں لیکن دبئی میں تو ہیر سیلونز نے سب کو پیچھے چھوڑ دیا جہاں بالوں کو لمبا کرنے کے لئے جوﺅں کی فروخت اس بات کو بنیاد بنا کر کی جارہی ہے کہ اس کی وجہ سے بال لمبے ہوتے ہیں.جوﺅں کی فروخت اس قدر مشہور ہوئی ہے کہ یو اے ای کے حکام کو یہ وارننگ جاری کرنی پڑی کہ اگر کسی نے یہ عمل کیا تو اسے 544ڈالر(60ہزارروپے) جرمانہ کیا جائے گا.
اگر سیلون جرمانے کے بعد بھی باز نہیں آئیں گے تو جرمانے کی رقم بڑھا دی جائے گی.بیوٹی سیلونز نے یہ وطیرہ بنالیا تھا کہ وہ جن لوگوں کے سروں کے جوئیں ہوتی تھیں ،بالوں کو کاٹنے کے دوران ان میں سے نکال کر انہیں محفوظ کرلیا جاتا تھا.ان جوﺅں کو ڈبوں میں ڈال کر انہیں مہنگے داموں خواتین کو فروخت کیا جاتا تھا.خواتین کا خیال ہے کہ سر میں جوئیں ہونے سے ان کے بال لمبے ہوں گے اور جوﺅں کی طلب میں اضافے کی وجہ سے ایک جوں کی قیمت 3.8ڈالر (450روپے)تک جاپہنچی تھی.ماہرین جلد نے خواتین کو کہا ہے کہ جوﺅں کی وجہ سے بال لمبے ہوں یا نہ ہوں لیکن جلد کی بیماریاں پیدا ہوں گی لہذاان سے اجتناب برتیں.
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top