ازدواجی زندگی میں وہ کون سا نکتہ ہوتا ہے جب آدمی کو شریک حیات سے علیحدگی کا فیصلہ کر لینا چاہیے

8

لندن(قدرت روزنامہ10فروری2017)بعض لوگوں کا ازدواجی تعلق بسااوقات انتہائی تلخ ہو جاتا ہے اور وہ علیحدگی کے پہلو پر غور کرنے لگتے ہیں. ایسے میں ایک سوال اٹھتا ہے کہ ازدواجی زندگی میں وہ کون سا نکتہ ہوتا ہے جب آدمی کو شریک حیات سے علیحدگی کا فیصلہ کر لینا چاہیے؟ اب ایک ماہرنے اس سوال کا ایسا حیران کن جواب دے دیا ہے کہ اگر اس پر عمل کیا جائے تو اکثر مردوں کی شادیاں ٹوٹ جائیں، بلکہ اکثر ٹوٹتی ہی رہیں.

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق ازدواجی تعلق کے ماہر جیمز پریس کا کہنا ہے کہ ”جب کوئی راہ میں آتے جاتے تانک جھانک کرے اور اس کے ذہن میں آنے لگے کہ اسے اس اجنبی مرد یا عورت کے ساتھ تعلق قائم کرلینا چاہیے تو یہ وہ وقت ہوتا ہے جب اسے اپنے شریک حیات سے علیحدگی کا فیصلہ کر لینا چاہیے.“

 جیمز پریس نے اپنے نکتہ نظر کی وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ ”اگر آپ کسی سلیبرٹی، اداکار، اداکارہ وغیرہ کی طرف جنسی رغبت رکھتے ہیں تو یہ اور بات ہے لیکن اگر آپ کی نظریں ہمہ وقت اپنے شریک حیات کی بجائے دوسروں پر پڑنے لگیں تو آپ کو خود سے لازمی پوچھنا چاہیے کہ ایسا کیوں ہے؟جب آپ اپنے غیرشادی شدہ دوستوں کی آزادانہ سرگرمیوں سے حسد کرنے لگیں اور آپ کو لگے کہ آپ ان سرگرمیوں سے محروم ہو، آپ کو لگنے لگے کہ آپ کی زندگی میں ٹھہراﺅ آ گیا ہے، اس میں کچھ نیا باقی نہیں رہا تو آپ کو اپنی موجودہ ازدواجی صورتحال پر نظرثانی کرنی چاہیے.مذکورہ تمام علامتیں آپ کے ازدواجی تعلق میں بڑی خرابی کی نشاندہی کرتی ہیں.“
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top