میوہ جات، پالک اور سبزیاں کھانے سے حمل ضائع ہونے سے بچاجاسکتا ہے۔تحقیق

n4

نیویارک(قدرت روزنامہ09فروری2017)ایک تازہ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ میوہ جات، پالک اور سبزیاں کھانے سے حمل ضائع ہونے سے بچاجاسکتا ہے. سائنسدانوں کاکہنا ہے کہوٹامن ای کی کمی کی وجہ سے اسقاط حمل کے امکانات بڑھ جاتے ہیں اوراس کی وجہ سے بننے والے بچے (ایمبریو)کی صحیح نشوونما بھی نہیں ہوپاتی.

اس کمی کی وجہ سے بچے کی دماغی استطاعت میں کمی واقع ہوتی ہے اور نتیجہ حمل ضائع ہونے کی سورت میں نکلتا ہے.ماہرین کاکہنا ہے کہ جو خواتین حاملہ ہونا چاہتی ہیں انہیں چاہیے کہ ایسے کھانے استعمال کریں جن میں منرلزکی مقدار زیادہ ہو.اوریگون یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ منرلز کی کمی کی وجہ سے فیٹی ایسڈ کم ہوتے ہیں جس کی وجہ سے حمل ضائع ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں.اس کی کمی سے اومیگاتھری ڈی ایچ اے میں کمی ہوتی ہے اور جب ایمبریو کو یہ نہیں ملتا تو وہ خون میں موجود گلوکوز کا استعمال شروع کردیتا ہے لیکن اس کی وجہ سے ماں کے جسم میں کمزوری پیدا ہوتی ہے جو کہ اسقاط حمل کی طرف لے جاتی ہے.

 ”فری ریڈیکل بائیولوجی اینڈ میڈیسن“ میں شائع ہونے والی تحقیق میں بتایاگیا ہے کہ ماں کو جسم میں گلوکوز کی مقدار کو بڑھانے کے لئے ایسی غذاﺅںکا استعمال کرنا چاہیے جو کہ منرلز سے بھرپور ہوں.تحقیق کار پروفیسر میرٹ ٹریبر کاکہنا ہے کہ وٹامن ای کے کئی مقاصد ہیں اور اس کا سب سے بڑا فائدہ جسم میں انٹی آکسیڈینٹس کی مقدارکو بڑھانا ہے.اس کاکہنا ہے کہ ماﺅں کو چاہئے کہ ایسے کھانے کھائیں جن میں وٹامن ای کی مقدار زیادہ ہوکہ اس طرح انہیں ایسی غذائیت ملے گی جو بچے کی پیدائش میں مدد دے گی.ایسی غذاﺅں میں خشک میوہ جات، سبز پتوں والی سبزیاں شامل ہیں جو کہ حمل کے دنوں میں زیادہ استعمال کرنی چاہئیں.
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

Daily QUDRAT is an UrduLanguage Daily Newspaper. Daily QUDRAT is The Largest circulated Newspaper of Balochistan .

رابطے میں رہیں

Copyright © 2017 Daily Qudrat.

To Top