”ماں باپ کو چاہیے کہ بچے کو 4ماہ کی عمر میں ہی مونگ پھلی سے بنی اشیاءکھلانی شروع کر دیں

لندن(قدرت روزنامہ08-جنوری-2017) ڈاکٹر عموماً نصیحت کرتے ہیں کہ بچے کو 6ماہ کی عمر تک ماں کے دودھ کے سوا کچھ نہ دیا جائے اور مونگ پھلی اور دالوں وغیرہ سے بنی ہوئی اشیاءایک سال تک بچے کو دینا تو دور، ماں کے لیے بھی ممنوع قرار دے دی جاتی ہیں لیکن اب امریکی ماہرین نے ماں باپ کو اس کے برعکس ہدایت کر دی ہے. میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ”ماں باپ کو چاہیے کہ بچے کو 44ماہ کی عمر میں ہی مونگ پھلی سے بنی اشیاءکھلانی شروع کر دیں، کیونکہ اس سے وہ مختلف الرجیز سے محفوظ رہیں گے.

“ نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ کے عہدیدار اور امریکن کالج آف الرجی کے ڈاکٹر میتھیو گرین ہاٹ کا کہنا ہے کہ ”بعض بچوں کو مونگ پھلی سے الرجی ہوتی ہے. اس لیے کسی بھی بچے کو اس سے بنی اشیاءکھلانے سے پہلے اس کا چیک اپ کروا لیں اور بہتر ہے کہ اسے پہلی خوراک ڈاکٹر کے آفس میں دیں. بچے پوری مونگ پھلی نہیں کھا سکتے اس لیے انہیں پی نٹ بٹر یا آسانی سے چبائے جانے والے پی نٹ سنیکس دینے چاہئیں.اگر آپ کا بچہ مونگ پھلی کی الرجی کا شکار نہیں تو پھر یہ اشیاءاسے دیگر کئی طرح کی الرجیز سے محفوظ رکھیں گی.“..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top