کلونجی میں موت کے سوا ہر بیمار ی کا علاج

اسلام آباد (قدرت روزنامہ01فروري2017)کلونجی کے بے شمار فوائد کے بارے میں تو سب ہی جانتے ہیں، کلونجی میں بے شمار بیماریوں سےنجات کی قوت ہے، کلونجی کو ادویات کے علاوہ کھانے اور اچار وغیرہ میں بھی استعمال کیا جاتا ہے. غرض یہ کہ کلونجی کھانے میں ذائقہ بھی پیدا کرتی ہے اور سینکڑوں بیماریوں میں شفا بھی ہے.

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے

“کلونجی استعمال کیا کرو کیونکہ اس میں موت کے سوا ہر بیماری کے لئے شفا ہے”.

حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے آج سے چودہ سو سال قبل جو ارشادات فرمائے، طب و سائنس آج اس کی تصدیق کررہے ہیں.

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ کلونجی کی افادیت کے بارے میں جتنی بھی ریسرچ کی گئی ہے اب تک اس کے تمام تر فوائد کا پتا نہیں چلایا جا سکا ہے، حکمت چین ہو یا طب یونان، جڑی بوٹیوں کا استعمال جدید دور میں بھی مفید مانا جاتا ہے

کلونجی کی یہ ایک اہم خاصیت ہے کہ یہ گرم اور سرد دونوں طرح کے امراض میں مفید ہے، جب کہ اس کی اپنی تاثیر گرم ہے اور سردی سے ہونے والے تمام امراض میں مفید ہے.

نظام ہضم کیلئے مفید

کلونجی نظام ہضم کی اصلاح کے لئے اکسیر کا درجہ رکھتی ہے. ریاح، گیس اور بد ہضمی میں اس سے بہت فائدہ ہوتا ہے. وہ لوگ جن کو کھانے کے بعد پیٹ میں بھاری پن، گیس یا ریاح بھر جانے اور اپھارے کی شکایت محسوس ہوتی ہو، کلونجی کا سفوف تین گرام کھانے کے بعد استعمال کریں تو نہ صرف یہ شکایت جاتی رہے گی بلکہ معدے کی اصلاح بھی ہوگی.

سانس اور دمے کی تکلیف دور کرنے کیلئے

سانس کی تکلیف، دمے کا مرض، گردے اور جگر کی خرابی ہو یا دوران خون میں نقص کے سبب یا پھر دل کے عارضے ہوں، ان تمام بیماریوں کا موثرعلاج چُٹکی بھر کلونجی کے بیج یا اس کے خالص تیل کے چند قطروں کا مسلسل استعمال ہے.

جسم کے مدافعتی نظام کو مضبوط بنانے کے لئے کلونجی سے زیادہ موثر کوئی دوسری چیز نہیں، یہ درد کُش بھی ہے اور جسم کے کس بھی حصے میں ہونے والی سوزش میں بہت فائدہ مند بھی ثابت ہوتی ہے.

سرطان کیلئے مفید

سرطان جیسے مہلک عارضے یا دیگر انفیکشن وغیرہ سے بچاؤ کے لئے کلونجی کا استعمال نہایت مفید ثابت ہوتا ہے.

بلڈ پریشر کنٹرول کرنے میں مفید

اگر کلونجی کا باقاعدگی سے استعمال کیا جائے تو یہ جسم میں کولیسٹرول کو ختم کرکے بلڈ پریشر کو کنٹرول کرتی ہے، ایک تحقیق میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ کلونجی کے استعمال سے دمہ کنٹرول کرنے میں بہت مدد ملتی ہے جبکہ گلے کے ورم میں بھی یہ بہت فائدہ مند ثابت ہوتی ہے.

سرطان جیسے مہلک عارضے یا دیگر انفیکشن وغیرہ سے بچاؤ کے لئے کلونجی کا استعمال نہایت مفید ثابت ہوتا ہے.

نزلہ زکام دور کرنے کیلئے

سردیوں کے موسم میں جب تھوڑی سی سردی لگنے سے زکام ہو نے لگتا ہے تو ایسی صورت میں کلونجی کو بھون کر باریک پیس لیں اور کپڑے کی پوٹلی بنا کر بار بار سونگنے سے زکام دور ہو جاتا ہے. اگر چھینکیں آرہی ہوں تو کلونجی بھون کر باریک پیس کر رو غن زیتوں میں ملا کر اس کے تین چار قطرے ناک میں ٹپکانے سے چھینکیں جاتی رہیں گی.

دانتوں میں تکلیف دور کرنے کیلئے

اگر دانتوں میں ٹھنڈ ا پانی لگنے کی شکایت ہو تو کلونجی کو سر کے میں جو ش دے کر کلیاں کرنے سے فائدہ ہوتا ہے.

چہرے کی رنگت میں نکھار لانے کیلئے

چہرے کی رنگت میں نکھار اور جلد صاف کرنے کے لئے کلونجی کو باریک پیس کر گھی میںملا کر روغن زیتوں میںملا کر استعمال کیا جائے تو اور زیادہ فائدہ ہوتا ہے. آج کل نوجوان لڑکوں اور لڑکیوں میں کیل ، دانوں اور مہاسوں کی شکایت عام ہے. وہ مختلف بازاری کریمیں استعمال کر کے چہرے کی جلد کو مزید خراب کر لیتے ہیں. ایسے نوجوان بچے بچیاں کلونجی باریک پیس کر ، سر کے میں ملا کر سونے سے پہلے چہرے پر لیپ کریں اور صبح چہرہ دھولیا کریں. چند دنوں میں بڑے اچھے اثرات سامنے آئیں گے اس طرح لیپ کرنے سے نہ صرف چہرہ کی رنگت صاف و شفاف ہو گی اور مہانسے ختم ہو ں گے بلکہ جلد میں نکھار بھی آئے گا .

شوگر کے مریضوں کیلئے

کلونجی کے استعمال سے ذیابیطس کے مریضوں کیلئے مفید ہے، شوگر کے مریض روزانہ صبح خالی پیٹ 5 یا 6 دانے کلونجی کے دانے کھالیں ، تو اس سے شوگر کنٹرول میں رہتی ہے اور شوگر سے ہونے والے دیگر امراض سے انسان بچا رہتا ہے. لیکن یہ ٹوٹکہ مستقل مزاجی سے استعمال کرنا ہے.

بالوں کے لئے مفید

کلونجی کا تیل بالخورہ کی شکایت میں بہت فائدہ دیتا ہے. بالخورہ میں بال اڑ جاتے ہیں اور دائرے کی صورت میں نشان بن جاتا ہے پھر دائرہ دن بدن بڑھتا ہے اور عجیب سی نا خوشگواری کا احساس ہوتا ہے. یہ تیل سر کے گنج کو دور کرنے اور بال اگانے میں بھی مفید ہے. مزید یہ کہ اس تیل کے استعمال سے بال جلد سفید نہیں ہوتے اور اس تیل کو مختلف طریقوں سے داد، اگزیما میں بھی استعمال کیا جاتا ہے.

مغرب میں امراض جلد اوربال جھڑنے کی بیماری کے خلاف کلونجی کا تیل بہت زیادہ استعمال کیا جاتا ہے.

کان کا درد کیلئے

کلونجی کا تیل اور تل کا تیل ملا کر کان میں ڈالنے سے کان کا درد دُور ہوجاتا ہے.

موٹاپا دور کرنے میں مفید

کلونجی موٹاپا کم کرنے میں بھی بہت فائدہ مند ہوتی ہے. کلونجی کو باریک پیس لیں اور اس میں اسی کے برابر کالی مرج ملالیں اور اس کے ساتھ شہد اور 1 لیموں کا رس ملا کر صبح نہار منہ پی لیں. اس کو پینے سے آپ کے جسم میں موجود چربی اضافی چربی ختم ہوجائے گی.

..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top