2016 کی 10 بہترین ایجادات اور ڈیوائسز

اسلام آباد (قدرت روزنامہ31دسمبر2016)ہر سال نت نئی ایجادات، ڈیوائسز وغیرہ متعارف کرائی جاتی ہیں جن میں سے ہر ایک کا مقصد لوگوں کی زندگیوں میں آسانی لانا ہے.

تو 2016 میں سے ہم نے ایسی ہی بہترین اور عجیب ٹیکنالوجیز کا انتخاب کیا ہے جنہوں نے انقلاب برپا کیا.

مسافر بردار ڈرون   mus  

مسافروں کو لے کر سفر کرنے والا پہلا ڈرون بہت جلد آسمانوں پر پرواز کرتا نظر آئے گا. جی ہاں چین میں تیار ہونے والی ایہانگ 184 نامی ڈرون کو مسافر برداری کے لیے تیار کیا گیا ہے اور اس میں ایک شخص 23 منٹ کی پرواز کا مزہ لے سکتا ہے.

اس ڈرون کا نمونہ جنوری 2016 میں کنزیومر الیکٹرونکس شو میں رکھا گیا تھا جبکہ اسے امریکا کے علاقے نویڈا میں اس ڈرون کو آزمائشی پروازوں کی اجازت مل گئی ہے. یہ ڈرون 62 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے 23 منٹ تک ایک شخص کو لے کر پرواز کرسکتا ہے اور دوران پرواز منزل کے تعین کے لیے گوگل میپس کو استعمال کرتا ہے.

اس میں ایسے سنسرز نصب کیے گئے ہیں جو راستے میں آنے والی رکاوٹوں سے اسے بچاتے ہیں تاہم اس پر سفر کرنے والے مسافر پرواز کے دوران ڈرون کو سنبھال نہیں سکتے بلکہ وہ خودکار طور پر پرواز کرتا ہے.یہ ڈرون جب فروخت کے لیے پیش کیا جائے گا تو اس کی قیمت 2 سے 3 لاکھ ڈالرز ہوگی.

سام سنگ کا اسمارٹ فریج

سام سنگ کمپنی کی جانب سے جنوری میں ایک ریفریجریٹر متعارف کرایا گیا جس کے ذریعے آپ گھر بیٹھے شاپنگ کرسکتے ہیں. گھریلو استعمال کے اس فریج میں ساڑھے 21 انچ کی اسکرین نصب ہے جس کے ذریعے ڈیجیٹل شاپنگ بھی کی جاسکتی ہے اور فریج کے ذریعے آن لائن تصاویر بھی پوسٹ کی جاسکتی ہیں.

اس فریج میں موجود ایپ کے ذریعے آپ کھانے پینے کے سامان سے لے کر کسی بھی چیز کی شاپنگ سپرمارکیٹس سے گھر بیٹھے کرسکتے ہیں جس کی فوری گھر بیٹھے ڈیلیوری کی جائے گی.اس فریج کے اندر ایک کیمرا بھی نصب ہے جو کہ دیکھ کر بتائے گا کہ کون سی چیز ختم ہوگئی ہے اور اس کو اسٹور سے منگنوانے کی ضرورت ہے، اور یہ کیمرا آپ کے موبائل فون سے بھی منسلک ہوگا، جس کے ذریعے آپ کہیں باہر بھی دیکھ سکتے ہیں کہ گھر پہنچنے پر آپ کے کھانے کے لیے کچھ ہے بھی یا نہیں.

چینی الیکٹرک گاڑی     chee  

فراڈے فیوچر چین کے ایک پراسرار سمجھی جانے والی الیکٹرک کار کمپنی ہے، جس نے 2016 کے شروع میں اپنی کانسیپٹ گاڑی متعارف کرائی تھی، ایک ہزار ہارس پاور کی ایف ایف زیرول نامی گاڑی کا اسٹیرئینگ اسمارٹ فونز سے منسلک کیا جاسکتا ہے جبکہ اس میں انٹرنیٹ سے جڑا ہوا ڈیش بورڈ بھی ہے، اس گاڑی کے ڈیزائن نے ہی لوگوں کو دیوانہ کردیا تھا.

مرسڈیز کی شکل بدل لینے والی گاڑی

مرسڈیز بینز نے اپنی ' کانسیپٹ انٹیلی جنٹ ایروڈائنامک آٹوموبائل' نامی گاڑی لاس ویگاس میں جاری سی ای ایس ٹیکنالوجی نمائش کے دوران متعارف کرائی.کمپنی نے اس کے انٹرفیس میں اضافہ کیا ہے اور گاڑی کے اندر صارفین کے لیے ایسی سہولیات دی گئی ہیں جو اس سے پہلے دیکھنے میں نہیں آئیں.

مرسڈیز نے مستقبل کی اس گاڑی میں رئیل ٹائم میں تھری ڈی رینڈرنگ ظاہر کرنے میں مدد دینے کی صلاحیت بھی رکھی ہے.اس گاڑی میں نیویڈا ڈرائیو نامی نیا آرٹی فیشل انٹیلی جنس کمپیوٹر بھی موجود ہے. یہ مرسڈیز کی پہلی گاری ہے جو رفتار پکڑنے پر اپنا ڈیزائن تک بدل سکتی ہے تاکہ ڈرائیونگ زیادہ موثر طریقے سے کی جاسکے.

ایل جی کا کاغذ کی طرح جانے والا ٹیلیویژن

کیا آپ ایسی ٹی وی اسکرینز خریدنا پسند کریں گے جنھیں اخبار کی طرح موڑ کر کسی بیگ بلکہ تہہ کرکے جیب میں رکھ کر کہیں بھی لے جایا جاسکے ؟ اگر ہاں تو ایل جی کی رول ایبل او ایل ای ڈی اسکرین اس کا جواب ہے.2016 میں ایل جی نے اس طرح کی 18 انچ کی انوکھی اسکرین کے نمونے کو پیش کیا.

اسے ایک گلاس کے اندر رکھا گیا تھا مگر سادہ اسکرین پر اس کے فیچرز کو دکھایا گیا ہے جس نے دیکھنے والوں کو حیران کرکے رکھ دیا. اس کا ڈسپلے کاغذ جتنا پتلا ہے اور او ایل ای ڈی کو چھونا بہترین احساس دلاتا ہے.اس کی فوٹیج کے مطابق اسکرین کا ڈسپلے ڈیزولوشن 810x1200 تھا جو اتنا زیادہ تو نہیں مگر اس کو کاغذ کے ٹکڑے کی موڑ کر کہیں بھی لے جانا اسے خاص بناتا ہے.

چین کی مستقبل کی بس

رواں سال مئی میں چین نے ایسی بس کو متعارف کرایا تھا جو سڑک پر گاڑیوں کے اوپر سے گزر سکتی ہے. اس ایجاد کا مقصد سڑک کو عام گاڑیوں کے لیے بھرپور طریقے سے استعمال کرنے کے ساتھ ٹریفک جام سے بچنا اور آلودگی میں کمی لانا تھا.

بجلی سے چلنے والی یہ ٹرانزٹ ایلی ویٹڈ بسیں ریل جیسے ٹریک پر چلتی ہیں اور اس طرح ڈرائیور کو کسی عام سڑک پر گاڑیوں کے اوپر سے گزرنے میں مدد ملتی ہے. ہر بس میں 1200 مسافر سفر کرسکتے ہیں اور اس کا متاثر کن سسٹم سستا اور تیز ترین پبلک ٹرانسپورٹ کا آپشن فراہم کرتا ہے.

اگرچہ یہ بسیں ابھی کام کرنا شروع نہیں ہوی اور کچھ ڈیزائن اور حفاظتی اقدامات پر کام ہورہا ہے مگر جلد ہی یہ کم ازکم چین کی سڑکوں پر تو نظر آئیں گی اور طویل المعیاد بنیادوں پر پبلک ٹرانسپورٹ کے مسئلے کا حل ثابت ہوں گی.

جوتے جو اپنے تسمے خود بند کریں

بیک ٹو دی فیوچر کے بعد سے ہر ایک اس طرح کے جوتوں کا خواب دیکھ رہا تھا اور 2016 میں نائیکی نے اس کو عملی شکل دی. جب ان جوتوں کو پہننے والا پیروں کے انگوٹھوں کے قریب بٹن کو پریس کرتا ہے تو ہائپر اڈپٹ نامی سسٹم خودکار طور پر تسموں کو تنگ اور ڈھیلا کردیتا ہے. یہ جوتے جسمانی طور پر کسی قسم کی معذوری کے شکار افراد کے لیے بہت فائدہ مند ہیں جیسا کمپنی کا دعویٰ ہے.

ایسے کھیل کے میدان جو کہیں بھی فٹ ہوسکیں

تھائی لینڈ کے دارالحکومت بینکاک کے بیشتر علاقے اتنے گنجان آباد ہیں کہ وہاں نئے پارکس کی تعمیر کے لیے جگہ ہی نہیں جس کے نتیجے میں بچوں کو کھیلنے کی سہولت میسر نہیں. یہی وجہ ہے کہ رئیل اسٹیٹ کمپنی اے پی تھائی لینڈ نے پہلے فضائی فوٹوگرافی سے ایسے جگہوں کی نشاندہی کی جس میں کچھ زمین خالی پڑی تھی، جس کے بعد انہیں کنکریٹ، پینٹ اور دیگر میٹریلز سے بھر کر کھیل کے میدان کی جگہ دے دی گئی، جس میں روایتی حد بندی موجود نہیں. اب تک ایسے دو کھیل کے میدان بینکاک میں تیار کیے جاچکے ہیں اور اب تیسرے پر کام جاری ہے.

شیاﺅمی کا کانسیپٹ اسمارٹ فون مکس

چینی کمپنی کا شیاﺅمی فلیگ شپ اسمارٹ فون مکس ایج لیس فیبلیٹ ہے جس کی 6.4 انچ اسکرین دنگ کر دینے والی ہے. اس کی سرامکس باڈی کو سیاہ پالش کی گئی ہے جبکہ یہ 18 قیراط کے سونے سے سجے ورڑن میں بھی فروخت کیا جائے گا.

اس فون کو یہ منفرد ڈیزائن یعنی ہر طرف اسکرین کو رکھنے کے لیے چینی کمپنی نے ہر پہلو پر کام کیا اور اسپیکر ہول، سنسر اور فرنٹ فیسنگ کیمرہ پر خصوصی توجہ دی گئی ہے.

کمپنی نے کئی سال اسپیکر کے متبادل کی تلاش میں لگا کر پائیز الیکٹرک اسپیکر کو اس فون کا حصہ بنایا جبکہ الٹرا سونک سنسر کے اضافے کے ساتھ فرنٹ کیمرے کو دائیں جانب کے نچلے کونے میں منتقل کردیا گیا. اس فون کے قابل ذکر فیچرز میں سنیپ ڈراگون 821 چپ، 2.35 گیگا ہرٹز اور 4400 ایم اے ایچ بیٹری شامل ہیں.

سیلفی ڈرونز

ڈرونز کے بارے میں آپ نے بہت کچھ سنا ہوگا مگر آن اے گو فلائی نامی ڈرون سب سے منفرد ہے، جو کہ اپنے مالک کا تعاقب کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ایچ ڈی ویڈیوز لے سکتا ہے جبکہ بہترین تصاویر بھی سیلفی کے طور لی جاسکتی ہیں اور اچھی بات یہ ہے کہ اس کے لیے ہاتھوں کو زحمت دینے کی بھی ضرورت نہیں ہوتی.

اسمارٹ رنگ

دیکھنے میں یہ کوئی خلائی گیجٹ لگتی ہے مگر ایورا نامی یہ اسمارٹ رنگ نیند کو ٹریک کرنے کے لیے بنای گئی ہے. یہ فٹنس بینڈز اور گھڑیوں سے زیادہ بہتر کام کرتی ہے جو آج کل عام دستیاب ہیں.

یہ انگوٹھی آپ کی دن بھر کی سرگرمیوں پر بھی نظررکھتی ہے جبکہ یہ بھی بتاتی ہے کہ نیند کا معیار کیسا تھا اور اچھی نیند کے لیے مشورے بھی دیتی ہے.

   ..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top