قلات میں سردی کی شدت جاری، درجہ حرارت منفی 11 سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا

قلات (آئی این پی) قلات میں سردی کی شدت جاری، درجہ حرارت منفی 11 سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا .بازار سنساں ،لوگ گھروں میں محصور،سوختی لکڑیوں کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کرنے لگیں ،گیس پریشر غائب ،بجلی کی آنکھ مچولی و غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سے بھی عوام کو مشکلات کا سامنا ،تفصیلات کے مطابق بدھ اور جمعرات کے روز بھی سرد ہوائیں چلتی رہی جس کے باعث سردی کی شدت میں مزید اضافہ ہوا ،سردی کے باعث عوام گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے جبکہ بازار بھی ویران ہوگیا .

دوسری جانب سردی کے ساتھ ساتھ گیس سپلائی بھی بند ہونے اور بجلی کی طویل غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ وآنکھ مچولی سے کاروبار زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی ہے .محکمہ موسمیات قلات کے انچارج شیراحمدمینگل نے آئی این پی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ قلات میں سردی کی شدت میں اضافہ ہوتا جارہا ہے سرد ہوائیں بھی چل رہی ہے کل سے بارشیں ہونے اور پہاڑوں پر برفباری کا بھی امکان ہے جس کے بعد سردی کی شدت میں مزید اضافے کابھی امکان ہے .دریں اثناء عوامی حلقوں نے ملک کے سرد ترین علاقہ قلات میں گیس پریشر کی بندش اور بجلی کی طویل اور غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کاچیف جسٹس بلوچستان،وزیر اعلیٰ بلوچستان ،چیف سیکرٹری و دیگر اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کامطالبہ کیا ہے...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top