کوئٹہ،سانحہ8 اگست پر جوڈیشل رپورٹ آنے کے بعد صوبائی حکومت اخلاقی جواز کھو چکی ، عوامی نیشنل پارٹی

کوئٹہ(آن لائن)عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماؤں نے کہا کہ سانحہ8 اگست کے واقعہ پر جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ آنے کے بعد صوبائی حکومت اپنا اخلاقی جواز کھو چکا ہے سی پیک منصوبے میں پشتونوں کو مکمل نظرانداز کیا گیا پنجاب اور سندھ میں سی پیک سے بھر پور فائدہ اٹھایا مردم شماری ہر صورت میں ہونی چاہئے اور مردم شماری سے زیادہ صوبے کے حقوق پر احتجاج کر نے کی ضرورت ہے پشتون پرستی پر سیاست کرنے والوں نے عوام کو دھوکہ دیا اور جس طرح سی پیک پر احتجاج کرنے کا حق تھا وہ حق ادا نہ کیا مردم شماری کے معاملے پر وفاق اور بالادست طبقہ پشتون بلوچ کو لڑانے کی سازش کر رہے ہیں ان خیالات کا اظہار عوامی نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام احتجاجی ریلی ومظاہرے سے عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر اصغر خان اچکزئی،پارلیمانی لیڈر انجینئر زمرک خان اچکزئی، صوبائی جنرل سیکرٹری حاجی نظام الدین کاکڑ، مرکزی رہنماء عبدالمالک پانیزئی ، سید میر علی آغا، ضلعی صدر ملک ابراہیم کاسی سمیت دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کیا پارٹی رہنماؤں نے کہا کہ ملک میں سب سے زیادہ قربانیاں پشتونوں نے دی ہے مفادات دوسرے حاصل کر رہے ہیں اس طرح کسی کو بھی اجازت نہیں دینگے سانحہ8 اگست کے بعد مسلسل واقعات رونما ہوئے بلوچستان کے دعوے داروں نے ان تمام تر واقعات پر خاموشی اختیار کی جس کا یہ نتیجہ نکلا کہ اب شہداء کے لواحقین بھی اغواء ہو رہے ہیں اس طرح کسے خاموش رہے جو لوگ آج امن وامان کی صورتحال کنٹرول کر رہے ہیں وہی اغواء برائے تاوان اور دیگر واقعات میں ملوث ہے ان سے اچھا ہے کہ غریب صوبے کی پولیس اور لیویز کو امن وامان کا اختیار دیا جائے تو اچھا کردار ادا کرینگے ایک منصوبے کے تحت صوبے کے حالات خراب کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ہر واقعہ میں100 سے زیادہ جنازے اٹھانے والے اپنے حقوق سے محروم ہے وطن اورمٹی کے لئے قربانیاں پشتون دے رہے ہیں لیکن مفادات کوئی اور حاصل کر رہے ہیں اس کا ہر گز اجازت نہیں دینگے ملک کو باہمی مساوات اور برابری کی بنیاد پر چلایاجاسکتا ہے لیکن اس عملدرآمد نہیں ہوا اور بنگال ان کی محرومیوں اور حقوق سے انکار کی بنیاد پر بنگلہ دیش کی صورت میں الگ ہوا پھر باقی ماندہ پاکستان میں بھی چھوٹی قومیتوں بلخصوص پشتون بلوچ اقوام کے مسائل کو زیردست رکھا گیا پشتونخوا کی بجلی اورمعدنیات بلوچستا ن کے وسائل کو وفاق کے نام پر ہڑپ کیاجارہاہے سی پیک مغربی روٹ کو یکسرنظرانداز کرکے پشتونوں کی جنت نظیر وطن پشتونخواملی انتہاء پسندوں ‘ دہشت گردوں اور رجعت پسندوں اور ان کے سہولت کاروں کیلئے ایک محفوظ ٹھکانے کے طورپر پیش کیاجارہا ہے سی پیک کا چرچہ گوادر اور صوبہ کے حوالے سے کیا جارہا ہے جبکہ حالت یہ کہ گوادر کی عوام آج بھی بنیادی سہولیات سے محروم ہے اور دو بوند پانی کیلئے ترس رہی ہے مقررین نے کہا کہ حکمران عوام کو تحفظ فراہم کرنے میں مکمل طورپر ناکام ہو چکے ہیں سانحہ 8 اگست بارے سپریم کورٹ انکوائری کمیشن کی رپورٹ سے حکمران اور ذمہ دارن کی نااہلی ‘ کوتاہی ہی روز روشن کی طرح عیاں ہو چکی ہے صوبائی حکومت اور سیکورٹی کے ذمہ داری اخلاقی طورپر مستعفی ہو کر جرأت کا مظاہرہ کریں صوبہ میں امن وامان کی گھمبیر صورتحال اور پے درپے خونریز واقعات کے باوجود حکمرانوں کے بلند وبانگ دعوؤں سے عوام بخوبی آگاہ ہو چکے ہیں مذہب دین مبین اور قوم کے نام پر پشتونوں کو گزشتہ 4عشروں سے سبز باغ دکھانے والے قول و فعل میں تضاد کی وجہ عوام کا اعتماد کھوچکے ہیںآ پشتونوں کے دیرینہ اور حل طلب مسائل صرف اور صرف عوامی نیشنل پارٹی کے قوم دوست وسیع نظر سیاست میں مضمر ہے جس طرح پارٹی قیادت نے پشتونوں کو ملی شناخت پشتونخوا دیا گیا سی پیک منصوبے میں پشتونوں کو مکمل نظرانداز کیا گیا پنجاب اور سندھ میں سی پیک سے بھر پور فائدہ اٹھایا مردم شماری ہر صورت میں ہونی چاہئے اور مردم شماری سے زیادہ صوبے کے حقوق پر احتجاج کر نے کی ضرورت ہے پشتون پرستی پر سیاست کرنے والوں نے عوام کو دھوکہ دیا اور جس طرح سی پیک پر احتجاج کرنے کا حق تھا وہ حق ادا نہ کیا مردم شماری کے معاملے پر وفاق اور بالادست طبقہ پشتون بلوچ کو لڑانے کی سازش کر رہے ہیں..

.


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top