بی ایل اے نوشکی کے فراری کمانڈر بلخ شیر بادینی ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہو گئے

کوئٹہ (قدرت روزنامہ9جنوری-2016) کالعدم تنظیم بی ایل اے نوشکی کے فراری کمانڈر بلخ شیر بادینی ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہو گئے ہیں. ان کا کہنا ہے کہ کم عمری اور نادانی کی وجہ سے کالعدم تنظیم کا حصہ بنا ، اب ملک دشمنوں کا آلہ کار نہیں بنوں گا.

تفصیلات کے مطابق کالعدم تنظیم بی ایل اے نوشکی کے فراری کمانڈر بلخ شیر بادینی نے بلوچستان کے مختلف علاقوں سے 20 سے زائد فراریوں سمیت ہتھیار ڈالے. ذرائع کے مطابق ہتھیار ڈالنے والے فراریوں کا تعلق ڈیرہ بگٹی اور کوہلو سے ہے . میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلخ شیر بادینی نے کہا کہ کم عمری اور نادانی کے باعث ملک دشمنوں کے بہکاوے میں آ گیا اور ملک دشمنوں کے ہاتھوں میں چلا گیا تھا . انہوں نے کہا کہ بلوچوں پر نام نہاد ایجنڈا مسلط کیا جا رہا تھا ، بھٹکے بلوچ بھائیوں سے کہتا ہوں کہ بھارت کی باتوں میں نہ آئیں اور بلوچ نوجوان تعلیم حاصل کر کے ملکی ترقی میں کردار ادا کریں. اس موقع پر بلوچستان کے وزیر داخلہ سرفرار بگٹی نے بلخ شیر بادینی کو قومی دھانے میں شمولیت پر خوش آمدید کرتے ہوئے کہا کہ کالعدم تنظیم کے لوگ خود آرام دہ زندگی گزار رہے ہیں لیکن ان کی وجہ سے معصوم بلوچ پہاڑوں پر موجود ہیں ...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top