مکہ : حرم میں خود کو آگ لگانے کی کوشش کرنے والے سعودی شہری کی غمزدہ ماں بھی آخر کار بو ل پڑی

مکہ(قدرت روزنامہ17فروری2017)گزشتہ دنوں حرم مکہ میں انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا . جب ایک سعودی شہری خود کو آگ لگانے کی کوشش کی تاہم وہاں طواف کرنے والے شہری نے اسے پکڑ لیا اور ایک جان بچ گئی .

بعد ازاں تحقیقات کے بعد پتہ چلا کہ سعودی شہری ذہنی معذور شخص تھا . اب اس سارے معاملے کے رونما ہونے کے بعد اس سعودی شہری کی ماں بھی بول پڑی ہے .سعودی شہری کی ماں اُم محمد نے سعودی اخبار المدینہ کو بتایا کہ میرے شوہر کے مرنے کے بعد اس کے ترکے کی ساری جائیداد اس کے رشتہ داروں نے ہڑپ کر لی .وہ اپنے باپ کے ساتھ کام کرتا تھا. چونکہ اس کے پاس کوئی ملازمت نہیں تھی اسلیے با پ کے ساتھ کام کرنا ہی شروع کر دیا.لیکن باپ کی وفات کے بعد اس کی ساری جائیداد اس کے باپ کے رشتہ داروں ہڑپ کر لی. باپ کے رشتہ داروں نے عدالت سے بھی اپنے حق میں فیصلہ کروالیا . سعودی نوجوان کی والدہ نے ایک اور انکشاف کیا کہ اس کے بیٹے نے اس سے پہلے بھی خودکشی کرنے کی کوشش کی تھی. کچھ عرصہ قبل جب عدالت نے رشتہ داروں کے حق میں فیصلہ دیا تو اس کو بڑا دکھ لگا. جس کے بعد میرے بیٹے نے خود کو احاطہ عدالت میں بھی آگ لگانے کی کوشش کی تھی...


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top