متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانیوں نے پی ایس ایل ٹو کی مقبولیت کی وجہ کرکٹ کی بجائے چند کھلاڑیوں کی مبینہ فکسنگ اور بک میکرز سے روابط بن گئی

دبئی(قدرت روزنامہ16فروری2017)متحدہ عرب امارت میں قیام پزیر پاکستانیوں کے مطابق پی ایس ایل سیزن ٹو کی مقبولیت کی وجہ کرکٹ کے بجائے چند کھلاڑیوں کی مبینہ فکسنگ اور بک میکرز سے روابط بن گئی ہیں.اسی حوالے سے شارجہ میں جب برطانوی نشریاتی ادارے نے چند لوگوں سے بات کی تو ان میں سے بعض نے تو یہ کہہ کر بات کرنے سے انکار کر دیا کہ 'چھوڑیں بھائی ہم کیوں اپنا دل جلائیں.
'تاہم جن لوگوں نے بات کی ان میں سے اکثر کا کہنا تھا کہ اگر یہ کھلاڑی واقعی اس میں ملوث ہیں تو انھیں سخت سزائیں ہونی چاہیں.پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا سے تعلق رکھنے والے ارشد نے بھی اسی خیال کا اظہار کیا.'میرا نہیں خیال کہ ایسا کچھ ہوا ہے لیکن اگر ان کھلاڑیوں نے ایسا کیا ہے تو انھیں سخت سزائیں دینی چاہیے تاکہ دیگر کھلاڑی ایسا نہ کریں.
شارجہ کرکٹ اسٹیڈیم کے قریب ہی ایک رسیستوران میں کام کرنے والے ناصر خان کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ جن کھلاڑیوں کا نام سامنے آیا ہے اس بات پر بہت دکھ پہنچا ہے. ناصر خان کا کہنا تھا کہ یہ اچھے کھلاڑی تھے لیکن یہ پاکستان کیلئے نہیں پیسے کیلئے لڑتے ہیں. اس طرح پاکستان کو بدنام کرنے پر بہت دکھ پہنچا ہے. توقیر احمد کیانی نامی شخص کا کہنا تھا کہ سب کچھ اچھا ہونے کے باوجود اس طرح کی سرگرمی میں ملوث ہونے پر دکھ ہوتا ہے.
..


قدرت میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Loading...

تازہ ترین

To Top